February 8, 2020 at 10:17 am

Muslim League N leader Rana Sanaullah

مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثناء اللہ کہتے ہیں کہ کیا یہ وہی عدالت نہیں جو میری ضمانت کا فیصلہ جاری کرنے والی تھی۔

انسداد منشیات عدالت میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثناء اللہ نے کہا کہ واٹس ایپ کے ذریعے جج کا تبادلہ کردیاگیا۔

موجودہ جج بھی دیانت دار ہیں ۔خصوصی عدالت کا المیہ ہے کہ وزارت قانون تبادلے کے احکامات جاری کردیتا ہے۔

اپنے ساتھیوں اور وکلا کی مدد سے انصاف کے حصول کےلیے جنگ لڑوں گا۔ انہوں نے کہا کہ روزانہ بے قصور لوگوں کی ضمانت ہورہی ہے۔

سعدرفیق،احسن اقبال،شاہد خاقان عباسی اور حمزہ شہباز کی بھی ضمانت ہوگی۔ کل منظور ہونے والی قرارداد پی ٹی آئی کےلیےپھٹکار ہے۔

پی ٹی آئی پرویز مشرف کے فیصلے پر واویلا مچارہی تھی۔نتحریک انصاف سرعام پھانسی کی مذمت کررہی تھی۔

کل قومی اسمبلی میں وفاقی وزیر نے خود سرعام پھانسی کی قرارداد پیش کی۔ تحریک انصاف معاشرےمیں تلخیاں پیدا کررہی ہے۔

پی ٹی آئی سےاتحادیوں سمیت 22کروڑعوام ناراض ہے۔اتحادی پی ٹی آئی کی کشتی سے جتنا جلدی چھلانگ لگالیں بہتر ہے۔

ن لیگ وسط مدتی سیٹ اپ کے حق میں نہیں۔ہمارا ایک ہی مطالبہ ہے جتنا جلدی ہوسکے مڈٹرم الیکشن کرائے جائیں۔

Facebook Comments