حیدرآباد میں تاریخی کامیابی پر ایم کیو ایم کا جشن

شیئر کریں:

ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر خالد مقبول صدیقی نے حیدرآباد میں جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ جن لوگوں نے ہمارے حیدرآباد کے دفتر پر حملہ کیا انکو 12 ستمبر کو جواب مل گیا ہے۔
ہمیں ختم کرنے والے خود ختم ہوگئے جب بھی قوم پر مشکل وقت آیا حیدرآباد نے ہمارا ساتھ دیا ہے۔ نام نہاد لیڈر ایک ایک کروڑ روپے لیکر ایم کیو ایم کو ختم کرنے پاکستان آئے تھے۔
ہماری بہنیں کروڑوں سے بھی زیادہ قیمتی ہیں، کینٹ الیکشن میں ہماری تاریخی فتح ملی ہے۔
کنٹونمنٹ بورڈ کے 10وارڈوں پر ہونے والے انتخابات میں غیر حتمی و سرکاری نتائج کے مطابق 7وارڈز پر متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے امیدواروں نے کامیابی حاصل کی۔ تین وارڈز پر پیپلزپارٹی کامیاب ہوئی۔ نتائج کے غیر سرکاری اعلان کے بعد ایم کیوایم کے حلقوں میں جشن کا سماں رہا تھا۔


شیئر کریں: