دور جدید میں ڈرون اور ٹینکوں‌کے بجائے پتھروں سے لڑائی متعدد زخمی

شیئر کریں:

بھارت میں ایک دوسرے پر پتھر پھینکنے کے سالانہ مقابلے میں صرف سات منٹ میں 77 افراد شدید
زخمی ہوگئے۔ ہر سال ریاست اترکھنڈ سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں افراد پتھر بازی کا دوستانہ
میچ کھیلتے ہیں ۔

پتھر پھییکنے کے اس تہوار کوجسے بگوال کہتے ہیں۔ اس میلے میں شریف لوگ ایک دوسرے پر
شدید پتھر بازی کرتے ہیں اور لہولہان بھی ہوجاتے ہیں۔ یہ رسم ایک دیومالائی داستان سے شروع
ہوئی ہے۔

کہانی کے مطابق ’براہی‘ نامی ایک دیوی انسانوں کو یہ پیشکش کرتی ہے کہ اگرانسانوں کی کچھ
تعداد کو بھینٹ چڑھادیا جائے تو وہ اس کے بدلے تمام افراد کو بلاؤں کے حملے سےبچالے گی۔

اسی قصے کی یاد میں لوگ آج بھی ایک دوسرے پر پتھر بازی کرتے ہیں۔
اس سال کووروناکی وجہ سے یہ مقابلہ اتنا سخت نہیں رہا لیکن اس میں بھی کئی درجن افراد شدید
زخمی ہوئے ہیں۔
مقابلے میں شریک افراد کی کل تعداد 300 تھی جس میں 77 شدید زخمی ہوئے۔

گزشتہ سال قبلے کے لوگ زیادہ خوش تھے کیوں کہ تب 100سے زائد لوگ زخمی ہوئے تھے۔ زیادہ
خون بہنا بلاوں کو ٹالنے کے لیے مثبت شگن مانا جاتا ہے۔


شیئر کریں: