مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجی اڈے پر ایک بار پھر ڈرونز کی پروازیں

شیئر کریں:

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج ایک بار پھر شدید خوف کا شکار ہے۔ جموں میں بھارتی فوجی اڈے پر سخت
سیکیورٹی کے باوجود آج پھر دو ڈرونز اُڑتے دیکھے گئے ہیں۔ یہ دونوں ڈرون رات ایک بجے سے صبح چار بجے
کے دوران بھارتی فوج کے اڈے پر مسلسل پرواز بھرتے رہے۔

بھارتی فوج کے مطابق دونوں ڈرون جموں میں کالوچک اور کنجوانی فوجی اڈے پر اڑان بھرتے دیکھے گئے ہیں۔
یاد رہے کہ تین دن قبل بھی جموں میں بھارتی فضائیہ کے ایئرپورٹ پر ڈرون حملہ ہوا تھا۔ اس حملے میں دو
دھماکے کیے گئے جس دو بھارتی فوجیی زخمی ہوئے۔

بھارت میں مسلمانوں کا نسل کشی کا منصوبہ 2 بچوں سے زائد پر پابندی

اس حملے کے بعد بھارتی میڈیا نے ہمیشہ کی طرح بغیر کسی تحقیق کے الزامات عائد کرنا شروع کردیے تھے کہ
یہ ڈرون پاکستان سے جموں آئے تھے اور بھارتی فضائیہ کی اہم تنصیبات کو نشانہ بنایا۔ حملے کے بعد مودی نے
ملٹری قیادت سے اہم ملاقات کی جس کے بعد بھارت نے ایل او سی پر جلد سرویلنس سسٹم اور دفاعی نظام
تنصیب کردیا گیا۔ یہ نظام مقبوضہ کشمیر میں ڈرونز کی پروازیں روکنے کے لیے لگایا گیا تھا۔

تاہم اس نظام کی تنصیب کے دوسرے ہی روز دو ڈرونز کی پروازوں نے بھارتی فوج اور اس کے ناکارہ نظام کو
بے نقاب کردیا۔ یاد رہے کہ یہ جموں میں وہی بھارتی فوج کا اڈا ہے جس کے قریب 2002 میں مجاہدین نے
حملہ کر کے فوجی اہلکاروں سمیت 23 افراد کو ہلاک کردیا تھا۔
اسی فوجی اڈے پر 2018 میں دوبارہ مجاہدین نے حملہ کیا جس میں 6 بھارتی فوجی ہلاک اور 30 زخمی ہوئے تھے۔


شیئر کریں: