ایران کے ایٹمی پلانٹ کے بعد کورونا ویکسین بنانے والے سینٹر پر ڈرون حملہ

شیئر کریں:

ایران ایک بار پھر بیرونی قوتوں کے حملوں کی زد میں آگیا۔ اس بار ایران نے ایٹمی پلانٹ اور کورونا ویکسین پر
ریسرچ اور اس کی بڑے پیمانے پر تیاری میں مصروف میڈیکل کمپلیکس پر حملہ کیا گیا ہے۔

گزشتہ دونوں ایران کی ایٹمامک انرجی آرگنائزیشن کی حساس عمارت پر حملے کی کوشش کی گئی تھی۔ ایرانی
حکومت نے واضع کیا ہے کہ حملے کو ناکام بنا دیا گیا تھا اور سینٹر مکمل طور پر محفوظ ہے۔

ایران کا کہنا ہے کہ حملہ کس ہتھیار سے کیا گیا اس نوعیت کے بارے میں ابھی کچھ نہیں کہا جاسکتا۔ تاہم ایرانی
ذرائع کا کہنا ہے کہ کوارڈ کاپٹر کے ذریعے پلانٹ پر حملے کی کوشش کی گئی جسے ایرانی ڈیفنس سسٹم نے
مارگرایا۔

ادھر اسرائیل نے دعوی کیا ہے کہ ایرانی نیوکلئیر پلانٹ پر حملے میں شدید نقصان پہنچا ہے اور اس میں کام
بند کردیا گیا ہے۔

اسرائیل کی طرف سے ایرانی شہر کاراج میں میڈیکل کمپلیکس پر ڈرون حملے کا دعوی کیا جارہا ہے۔ ایران نے
اس میڈیکل کمپلیکس میں کورونا ویکسین پر ریسرچ اور اس کی بڑے پیمانے پر تیاری کا کام کیا جارہا ہے۔
تاہم ایران کی طرف سے ویکسین سینٹر پر حملے کی نہ تصدیق اور نہ تردید کی گئی ہے۔


شیئر کریں: