موبائل فون کی جاسوسی کرنے پر بیوی نے شوہر کے خلاف کیس کردیا

شیئر کریں:

بیوی یاسمین کے کس سے تعلقات ہیں اور وہ موبائل پر کیا باتیں کرتی ہے۔ ان سب سے خود کا اپ ڈیٹ
رکھنے کے لیے شوہر احمد نے موبائل کی مانیٹرنگ شروع کر دی۔

یاسمین کو جب احمد کی اس حرکت کا علم ہوا تو پھر اس نے عدالت میں کیس دائر کردیا اور طلاق کا
مطالبہ کر دیا۔ استغاثہ کے مطابق شوہر احمد نے اپنی بیوی یاسمین کو نیا فون خرید کے دیا اور اس پر
جاسوسی کرنے والی ایپ ڈاؤن لوڈ کر دی۔

اس ایپ کا کنٹرول احمد نے اپنے موبائل پر لے لیا۔ اس طرح احمد اپنی شریک حیات کی ہر پل کی سرگرمیاں
مانیٹر کرتا ہے۔ اس دوران اس نے اپنی بیوی کے دوست غفار کی اہلیہ ثریا کو اس کے شوہر کے پیغامات بھی
بھیجنے لگا۔

جب غفار نے اپنے پیغامات کے اسکرین شاٹس یاسمین کو دیکھائے تو ماجرا سامنے آیا۔ یاسمین اس پر سیخ پا
ہو کر اپنے شوہر احمد کے خلاف عدالت پہنچ گئی۔ یاسمین نے عزت نفس مجروع کرنے پر ہرجانہ اور طلاق
کا دعوی دائر کر دیا۔

سعودی عرب کی عدالت میں کیس زیر سماعت ہے اگر فیصلہ یاسمین کے حق میں آیا تو پھر احمد کو
ایک سال کی سزا اور پانچ لاکھ ریال تک کا جرمانہ عائد ہو سکتا ہے۔

خیال رہے سعودی عرب سمیت عرب ممالک میں نوجوان میاں کے درمیان اعتماد کا بہت زیادہ فقدان دیکھائی
دیتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ آئے روز میاں بیوی کی جانب سے کیسز عدالت میں پہنچے ہوتے ہیں۔ موبائل
ٹیکنالوجی آنے کے بعد سے طلاق کے واقعات میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے۔


شیئر کریں: