ماحولیات کا عالمی دن ضلع خانیوال میں انڈسٹریل ویسٹ واٹر کا ایشو

شیئر کریں:

خانیول سے امین وارثی

5جون 2021کو ماحولیات کا عالمی دن منایا جا رہا ہے اور اس حوالے سے پاکستان کی میزبانی میں عالمی سطح
پرمعاملات کو حتمی شکل دے کر اہم فیصلے کیے جائیں گے۔
ماحولیات کے قوانین پر عملدرآمد کے حوالے سے ضلع خانیوال کی سطح پر دیکھا جائے تو ملٹی نیشنل, نیسلے
فیکٹری کبیروالا / یونی لیور خانیوال سمیت تمام نیشنل انڈسٹریل یونٹ بد ترین خلاف ورزیوں کے مرتکب
ہو رہے ہیں۔نیسلے کبیروالا کا ڈیری ویسٹ واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ پرانی طرز کا ہے تحفظ ماحولیات کی جانب
سے اس کو اپ گریڈ کرنے کے لیے مبینہ طور پر لیڑ لکھا گیا لیکن عملدرآمد نہیں ہوا غیر قانونی طور زیر زمین
چار کلومیٹر تک پائپ لائن کے ذریعے فیکڑی کا آلودہ پانی ڈنگیاں پلاں کے مقام پر بہتے ہوئے راجباہ میں ڈالا
جا رہا ہے۔


تحفظ ماحولیات قوانین کے مطابق ڈیری ویسٹ ٹریٹمنٹ پلانٹ کے ارد گرد علاقوں میں تیس ہزار پودے لگانے
چاہیں جن کا قد چھ فٹ تک ہو لیکن موقع پر شجر کاری نام کی کوئی چیز نہیں نہ ہی کوئی پودا یا درخت لگایا
گیا۔ نیسلے کی تحفظ ماحولیات قوانین کی خلاف ورزی سے متعلق گزشتہ برس خانیوال کے ایک شہری راشد
رحمانی نے انوائر منٹ مجسٹریٹ کو درخواست دی لیکن انکوائری آگے نہ بڑھ سکی کیونکہ فیکٹری منیجمنٹ
نے ضلعی انتظامیہ کو راضی رکھا ہوا ہے۔
خانیوال کبیروالا روڈ پر جدید فیڈز کے نام سے ایک بڑی فیکٹری ہے اس فیکٹری کا سرے سے ٹریٹ منٹ پلانٹ
ہے ہی نہیں فیکڑی مالکان نے فیکڑی کے عقب میں تین چار ایکڑ زمین خرید کر اس میں تالاب بنا رکھے ہیں زیادہ
تر زہریلا اور آلودہ پانی زیر زمین ڈمپ کر دیا جاتا ہے اگر یہ تالاب اوور فلو ہو جائیں تو واٹر ٹینکرز بھر کر مقامی
راجباہ میں ڈال دیا جاتا ہے

فیکڑی کے اطراف میں ایک بھی درخت نہیں لگایا گیا. اس روڈ پر کئی کاٹن فیکٹریاں بھی ہیں وہ بھی تحفظ
ماحولیات کے قوانین پر عملدرآمد نہیں کرتیں. کبیروالا ملتان روڈ پر مسعود فیبرکس, رومی فوڈز اور دیگر کئی
یونٹ ہیں جو تحفظ ماحولیات کے قوانین کی دھجیاں اڑا رہے ہیں۔

ڈسڑکٹ آفیسر ماحولیات ضلع کا مؤقف لینے کے لیے گزشتہ روز سے فون کر رہا ہوں سرکاری نمبر خراب ہے موبائل
نمبر اٹینڈ نہیں ہو رہا بالآخر مسیج کیا اس کا بھی جواب نہیں دیا گیا آخری لائن یہی ہے کہ حکام بالا نوٹس لیں۔


شیئر کریں: