دے گئی داغِ جدائی! آہ میری بہن میرا پہلوان

شیئر کریں:

تحریر چیتا بھائی ابو حسام بخاری

تمام مسلمانوں کی اللہ کریم مغفرت فرمائے آمین
صبر کر لینے اور صبر آجانے تک کا سفر بہت اذیت ناک ہے
دعا کریں صبر کریں
دعا کریں پھر صبر کریں
دعا کرتے جائیں اور صبر کرتے جائیں۔
وہ سن رہا ہے وہ دیکھ رہا ہے وہ آپ کے ساتھ ہے یقین کر لیں۔
ان اللہ مع الصابرین (بے شک اللہ صبر کرنے والوں کے ساتھ ہے)

ماؤں کا عالمی دن اور امبرین کی ماں

میرے بیٹے سید حسام شاہ جی کی حقیقی خالہ مرحومہ 15 رمضان المبارک 28.4.2021 کو داغ مفارقت دے گئیں۔
میری اس بہن کے انتقال سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ کائنات تو موجود ھہ لیکن فکر و خیال کی دنیا اجڑ گئی ہے۔
آپ کی یاد ہمیشہ آتی رہے گی اور آپ ہمیشہ آنکھوں میں بسی رہو گی۔
اللہ تعالی میرے پہلوان کی قبر کو نور سے منور فرمائے اور صبح شام ابر ہائے رحمت ان کی مرقد کو سیراب کرتی رہے۔
آمین
یقینا میری بہن میرا پہلوان کی صحت تو نازک تھی لیکن ان کی صحت سے ایسا اندازہ بلکل نھیں ہوتا تھا کہ وہ اتنی جلدی داغ مفارقت دے جائیں گی لیکن قدرت کے فیصلے ہمارے قیاسات و خواہشات اور تخمینوں سے ماوراء ہوتے ہیں۔
اس دنیا میں ہر شخص زندگی کے گنے چنے سانس لے کر آیا ہے اور دنیا کی کوئی طاقت اس میں کمی
زیادتی نہیں کرسکتی۔

میرا پہلوان میری بہن
اخلاق و وقار کے ساتھ رہنے والی بیٹی کی یاد میں گزرنے والا ایک ایک پل یاد دلا رہا ہے کہ ایک خلاء
ہے جو شاید کبھی پورا نہیں ہوگا۔ رمضان میں افطار کروانا، سحری کروانی اور مہمان نوازی اس بہن پر ختم
تھی۔ بس مجھے بہت یاد آرہی ہو بہن ایک دن ہمیں بھی آنا ہے اس آرام گاہ کی طرف۔

دنیا کا یہ سفر عارضی ہے اور سفر آخرت ہی حقیقت ہے۔ اس سفر موت سے کوئی بھاگ نہیں سکتا اللہ
آخرت کی تیاری کرنا نصیب فرمائے۔
آمین
لیکن اکثر ایک دوسرے کی محبت کسک بن کر دل میں اٹھتی ہے آنکھیں بھگو جاتی ہے۔ بے شک وقت بدل جاتا ہے لیکن محبت تو نہیں بدلتی۔ بھائی بہن کی محبت تو امر ہوتی ہے کبھی نہیں بدلتی بھائیوں کو بہنوں کی یاد اور بہنوں کو بھائیوں کی یاد تڑپاتی اور رولاتی ہے۔
اگر ہم اپنی بہنوں اور بیٹیوں کی تربیت اسلام کے اصولوں کے مطابق کریں یہ ان کی بہترین تربیت ہو گی۔ وہ آگے اپنی اولاد کی بھی بہترین تربیت کرسکیں گی۔ اگر اسے اسلام کے احکامات کی تعلیم دی جائے تو ایک پاکیزہ معاشرہ وجود میں آئے گا۔
اسلام نے عورت کے بہن، پھوپھی اور خالہ ہونے کی صورت میں بھی ان کے حقوق کا بڑا خیال رکھا ہے۔ چنانجہ ابوداؤد و ترمذی میں نبی اکرم صلی اﷲ علیہ و سلم کا ارشاد ہے ’’اگر کسی کی تین بیٹیاں یا تین بہنیں ہیں اور وہ ان کے ساتھ حسن سلوک سے پیش آتا رہا ہو تو وہ جنت میں داخل ہو گا”۔ (ابوداؤد ، ترمذی)

امبرین تم میرے ساتھ کیا کر گئی ہو؟

بہن بھائیوں کی محبت میں کوئی لالچ نہیں ہوتی ان کی محبت ایمان کی طرح خالص ہوتی ہے۔
بس پہلوان آپ کو اللہ کریم اس رمضان کی بابرکت ساعات کی نسبت سے اپنی رحمتوں سےنوازے۔ اللہ کریم صبرجمیل عطاء فرمائے۔
آپ حضرات بھی دعاوں سے نوازیں اس بیٹی بہن کی اللہ کامل مغفرت فرمائے۔
اور ہاں جنت میں جنتیوں کے لیے سب سے بہترین نعمت اللہ کریم کا دیدار ہوگا یا اللہ ہمیں اپنا دیدار نصیب فرما۔
آمین اللہ
خیر اندیش آپ کا چیتا بھائی
سید ابوحسام بخاری


شیئر کریں: