ایران نے پاکستان پر فضائی پابندی عائد کردی

شیئر کریں:

ایران نے کرونا وائرس کی تیسری لہر پر قابو پانے کیلیے
پاکستان سے آنے اور جانیوالی تمام پروازوں پر پابندی لگادی۔
ایرانی محکمہ شہری ہوابازی کے ترجمان محمد حسن داہی بخش نے کہا ہے کہ
ایران کی وزارت صحت نے کرونا کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر پاکستان
اور بھارت سے آنے اور وہاں جانیوالی تمام پروازوں پر پابندی عائد کردی ہے۔
پاکستان میں یکم سے 23 اپریل تک ایک لاکھ 11 ہزار 851 نئے کیسز اور 2 ہزار 568 مریض انتقال کرچکے ہیں،
مجموعی طور پر اموات کی تعداد 16 ہزار 999 تک پہنچ چکی ہے۔

بھارت میں صورتحال انتہائی خراب ہے،
صرف 3 روز کے دوران 7 ہزار سے زائد افراد لقمۂ اجل بن چکے ہیں.
4 اپریل کے بعد سے مسلسل ایک سے تین لاکھ تک نئے کیسز رپورٹ ہورہے ہیں۔
ایران کے شہری ہوا بازی کے ترجمان کا مزید کہنا ہے کہ ایران اور بھارت کے
درمیان براہ راست پروازیں نہیں چلتیں تاہم تمام کنیکٹنگ فلائٹس پر بھی پابندی ہوگی۔

ترجمان محمد حسن داہی بخش نے بتایا ہے کہ ایران کی جانب سے 41 ممالک کی پروازوں پر پہلے ہی پابندی عائد ہے
اور جو مسافر زیادہ متاثرہ ممالک جانا چاہتے ہیں یا وہاں سے واپس آنا چاہتے ہیں تو ان کا ایران میں کرونا ٹیسٹ لازمی ہے۔
خیال رہے کہ ایران میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں ایران میں 18 ہزار 230 نئے کیسز سامنے آئے ہیں اور 374 اموات ہوئی ہیں.
ایران میں کرونا وائرس سے اب تک تقریباً 70 ہزار اموات ہوچکی ہیں۔


شیئر کریں: