پاکستان ویکسینیشن میں غریب ترین ملکوں سے بھی کافی پیچھے رہ گیا

شیئر کریں:

دنیا کے 155 ممالک میں کورونا ویکسین لگانے کا کام جاری ہے اب تک مجموعی طور پر 89 کروڑ 40 لاکھ
ڈوزز لگائی جا چکی ہیں تاہم امیر ملکوں میں ویکسین لگانے کی رفتار غریب ملکوں سے 25 گنا تک زیادہ
ہے۔ پاکستان ویکسینیشن میں غریب ملکوں سے بھی کافی پیچھے رہ گیا۔

کورونا نے تباہی پھیلانے میں تو امیر اور غریب ملکوں میں فرق نہیں کیا تاہم کورونا سے بچاو کے لیے ویکسین
کے حصول اور لگانے میں غریب ملک امیروں سے کافی پیچھے رہ گئے ۔ بلوم برگ کی رپورٹ کے مطابق امیر
ملکوں میں ویکسین لگانے کی رفتار کم آمدنی والے ملکوں سے 25 گنا تک زیادہ ہے۔ دنیا کے 27 امیر ترین
ملکوں کی مجموعی آبادی تو دنیا کی آبادی کا 10.9 فیصد بنتی ہے لیکن اب تک دنیا میں ویکسین کی جتنی
ڈوزز لگائی گئی ہیں ان مین سے 38.8 فیصد انہیں ملکوں میں لگائی گئی ہیں۔

اربوں کے قرضے اور 25 ارب کے نئے نوٹ‌ بھی حکومتی اخراجات پورے نہ کرسکے

دنیا کی آبادی میں ملکی آبادی کے حصے اور ویکسینیشن کے تناسب کے لحاظ سے پاکستان کا شمار آخری
چند ملکوں میں ہی ہوتا ہے۔ رپورٹ کے مطابق دنیا کی آبادی میں پاکستان کی آبادی 2.7 فیصد بنتی ہے جبکہ
اب تک پاکستان میں ویکسین کی لگائی جانے والی ڈوزز کی تعداد دنیا کی مجموعی تعداد کا صرف 0.1 فیصد
ہے۔
بنگلا دیش کی آبادی دنیا کی آبادی کا 2.2 فیصد ہے ڈوزز کی تعداد 0.7 فیصد ہے۔ بھارت کی آبادی دنیا کی
آبادی کا 17.7 فیصد ہے ویکسین کی لگائی جانے والی ڈوزز 13.6 فیصد ہیں۔

امریکا کی آبادی کا تناسب 4.23 فیصد ہے جبکہ ڈوزز کا تناسب 24.1 فیصد ہے۔ برطانیہ کی آبادی دنیا کی
آبادی کا 0.9 فیصد ہے ویکسینیشن کا تناسب 4.7 فیصد ہے۔ چینیوں کا عالمی آبادی میں تناسب 4.23
فیصد اور ویکسین کی ڈوزز کا تناسب 21 فیصد ہو چکا ہے۔
ترکی کی آبادی دنیا کی آبادی کا 1.1 9 فیصد اور ویکسینیشن کا تناسب 2.2 فیصد ہے۔


شیئر کریں: