دنیا کے بااثر مسلمان ملک سعودی عرب ایران کا کئی سال بعد پہلا رابطہ

شیئر کریں:

دنیا کے دو بااثر ترین ممالک سعودی عرب اور ایران کے درمیان کئی سال بعد پہلا براہ راست رابطہ ہوا ہے۔
دونوں ملکوں کے درمیان رابطہ عراق میں ہوا ہے۔ اس سلسلے میں عراق کے وزیر اعظم مصطفی الکاظمی نے
اہم کردار ادا کیا ہے۔ ان کی خواہش ہے کہ خطے کے اہم ترین ممالک کے درمیان کشیدگی ختم ہو۔

تاہم اس ملاقات سے سعودی عرب اور ایران دونوں ہی نے انکار کیا ہے اس کے برخلاف عراق کے میڈٰیا کا
کہنا ہے کہ سعودی وفد کی قیادت سعودی عرب کی خفیہ ایجنسی کے سربراہ خالد بن علی ال ہمیدان نے کی۔

بتایا یہ جاتا ہے کہ دونوں ہی نے ملاقات سے متعلق تفصیلات میڈیا پر شیئر کرنے کی مخالفت کی تھی۔ اطلاعات
ہیں دونوں حریف ممالک کے درمیان یہ چار سال بعد پہلی ملاقات تھی۔

عراق کے وزیر اعظم مصر اور اردن کے ذریعے بھی ایران اور سعودی عرب کو قریب لانے میں کردار ادا کر رہے
ہیں۔ خیال رہے عراق میں ایران کا بہت زیادہ اثر ہے اور وہاں ایرانی فوج کا بہت بڑا نیٹ ورک کام کر رہا ہے۔


شیئر کریں: