عالم دین عون محمد نقوی کا رضویہ میں‌ نماز جنازہ

شیئر کریں:

عالم دین اور اتحاد بین المسلمین کے داعی مولانا عون محمد نقوی 56 سال کی عمر میں مختصر علالت
کے باعث کراچی میں انتقال کر گئے۔ چند روز سے مولانا اسپتال میں زیر علاج تھے۔ مولانا عون محمد نقوی
معروف شیعہ رہنما علامہ شہنشاہ نقوی کےبڑے بھائی تھے۔ انہوں‌ نے 2 بیٹوں، تین بیٹیوں، 3 بھائیوں، تین بہنوں
اور والدین کو سوگوار اور لاکھوں‌ چاہنے والوں‌ کو سوگوار چھوڑا ہے ۔

مولانا عون محمد نقوی کا تعلق سندھ کے شہر خیرپور میرس سے تھا آپ نے سلطان مدارس سے تعلیم حاصل
کی وہ نوجوانی ہی میں کراچی منتقل ہو گئے تھے اور یہاں تعلیم کے بعد مجالس عزا پڑھنی شروع کردیں۔
آپ معروف خطیب کے ساتھ ساتھ 10 سے زائد مذہبی کتابوں کے مصنف بھی تھے ۔

مجلس وحدت مسلمین کے سیکریٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری، علامہ باقر عباس زیدی نے محمد عون
نقوی انتقال پر کہا ہے کہ مرحوم ملت تشیع کا قیمتی سرمایہ تھے آپ کا انتقال قوم کے لیے ایک ناقابل تلافی
نقصان ہے۔

سید محمد عون نقوی وحدت و اخوت کے داعی تھے ان کی مذہبی خدمات کو تادیر یاد رکھا جائے گا مرحوم
کے درجات کی بلندی اور اہل خانہ کے صبر کے لیے دعاگو ہیں معروف عالم دین انسان دوست شخصیت سید
محمد عون نقوی کی نماز جنازہ بعد نماز جمعہ امام بارگاہ شاہ کربلا ٹرسٹ اولڈ رضویہ سوسائٹی میں ادا
کی گئی تدفین وادی حسین کراچی میں ہوگی۔


شیئر کریں: