اسلام آباد ائیر پورٹ پر شہریوں کا جانا مشکل لیکن گداگر مافیا کا آسان

شیئر کریں:

اسلام آباد کے شہریوں کی گداگر مافیا سے جان چھڑانے کے دعوے محض دعوے ہی رہے۔ شہر بھر میں
گداگروں کا پہلے ہی سے راج تھا کہ اب ائیرپورٹ پر بھی مسافر ان سے محفوظ نہیں رہے۔

گداگروں کا نیٹ ورک سیکیورٹی کو جھول دے کر اسلام آباد انٹرنیشنل ائیرپورٹ پر بغیر کسی روک
ٹوک بھیک مانگ رہا ہے۔ اسلام آباد کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر ائیر پورٹ سیکیوریٹی فورسز کی
سیکیورٹی پر بھی بڑا سا سوالیہ نشان لگ گیا ہے۔ گداگر کو فوٹیج میں مسافروں کے ساتھ الجھتے ہوئے
دیکھا جاسکتا ہے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ شاپنگ مال، ریستوران اور سگنلز پر تو گداگروں نے پہلے ہی سے پریشان کیے رکھا
تھا اب وہ ائیرپورٹ پر بھی انہیں گھیرے رکھتے ہیں۔ گداگر پاکستان کی بدنامی کا سبب بن رہے ہیں۔

بین الاقوامی پروازوں کے زریعے آنے والے مسافروں کو پاکستان اترتے ہی گداگر گھیر لیتے ہیں۔ خبروالے
کو ذرائع نے بتایا ہے کہ گداگروں کے منظم گروہ کو ائیر پورٹ میں کام کرنے عملے کی سرپرستی حاصل ہے۔

اسلام آباد ائیر پورٹ پر پاکستان آنے والے سیاح گداگروں کا نشانہ بھی بن رہے ہیں۔ گداگر سیکیورٹی فورسز کی تین چیک پوسٹوں سے گزر کر ٹرمینل پر پہنچتے ہیں فوٹیج نے سوال اٹھا دیا۔ بین الاقوامی مسافروں کو پاکستان اترتے ہی ناخوشگوار تجربے کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ مسافروں کا کہنا ہے کہ اس کا زمہ دار کون ہے؟ مہمانوں کو میزبان اگر ایک سے زیادہ ہوں تو انہیں ائیرپورٹ سے پہلے ہی گاڑی سے اتار لیا جاتا ہے لیکن گداگروں کو روکنے والا کوئی نہیں؟


شیئر کریں: