ایران میں پاکستان کے 125 افراد گرفتار، غیرقانونی طریقے سے یورپ جارہے تھے

شیئر کریں:

تفتان سے سلیم ساسولی

ایران کی سیکیورٹی فورسز نے پاک ایران کے سرحدی شہر تفتان میں کارروائی کرتے ہوئے مزید 125
پاکستانی گرفتار کر لیے۔ قانونی دستاویزات نہ ہونے پر حراست میں لیے گئے تمام افراد کو راہداری گیٹ
تفتان پر لیویز انتظامیہ کے حوالے کر دیا گیا۔

غیر قانونی طریقے سے ایران پہنچنے والے ان تمام افراد کو سیکیورٹی فورسز نے مختلف شہروں سے حراست میں لیا۔ کسی کے پاس بھی سفری دستاویزات موجود نہ تھیں۔ گرفتار قیدیوں میں خیبر پختون خواہ کے 05 ، پنجاب 113 ، بلوچستان 02 اور آزاد کشمیر کے 05 شہری شامل ہیں۔

غیر قانونی طریقے ایران داخل ہونے پر مزید 500 پاکستانی گرفتار، یورپ جانا چاہتے تھے

خیال رہے پاکستان سے غیر قانونی طریقے سے یورپ جانے والے افراد ایران کا روٹ استعمال کرتے ہیں۔ آئے روز ایرانی حکام سیکڑوں افراد کو پاکستان کے حوالے کرتے ہیں۔ ان میں زیادہ تعداد پنجاب سے تعلق رکھنے والوں کی ہوتی ہے۔ پنجاب سے بیرون ملک جانے کا رجحان ملک میں سب سے زیادہ ہے۔
راہداری گیٹ پر محکمہ صحت کے پیرامیڈیکس اسٹاف کی جانب سے ان کی اسکریننگ کی گئی۔ تمام پاکستانی بہتر روزگار کے لیے ایران سے یورپ جانا چاہتے تھے ابتدائی کارروائی کے بعد انہیں ایف آئی اے کے حوالے کر دیا گیا۔


شیئر کریں: