بیرون ملک مقیم پاکستانی پی ٹی آئی سے ناراض، غیر ملکی سرمایہ کاری میں 78 فیصد کمی

شیئر کریں:

پاکستان میں غیر ملکیوں نے ڈالر لگانے کم کر دیئے،، رواں مالی سال پہلے سات ماہ کے دوران مجموعی طور پرغیر ملکی سرمایہ کاری میں گزشتہ سال کے مقابلے میں 78 فیصد کمی رکارڈ کی گئی۔۔
اسٹیٹ بینک کے مطابق مالی سال کے پہلے سات ماہ کے دوران ملک میں غیر ملکی سرمایہ کاری کا مجموعی حجم صرف 75 کروڑ 50 لاکھ ڈالر رہا،، جو گزشتہ سال اس عرصے سے 2 ارب 68 کروڑ 32 لاکھ ڈالر کم ہے،، جولائی سے جنوری تک پاکستان میں غیر ملکیوں کی طرف سے نجی شعبے میں براہ راست سرمایہ کاری کا حقیقی حجم 1 ارب 14 کروڑ 93 لاکھ ڈالر رہا،، جو گزشتہ سال سے 43 کروڑ 17 لاکھ ڈالر کم ہے،، گزشتہ مالی سال اس عرصے میں براہ راست سرمایہ کاری کا حقیقی حجم 1 ارب 57 کروڑ 70 لاکھ ڈالر تھا،، رواں سال اسٹاک مارکیٹ میں بیرونی سرمایہ کاری سے 23 کروڑ 69 لاکھ ڈالر،، اور حکومتی بانڈز اور ٹی بلز میں بیرونی سرمایہ کاری میں سے 15 کروڑ 35 لاکھ ڈالر کا انخلا رکارڈ کیا گیا۔۔
رپورٹ کے مطابق سات ماہ کے دوران پاور سیکٹر میں 47 کروڑ 58 لاکھ ڈالر،، اور مالیاتی سیکٹر میں 18 کروڑ ڈالر کی نئی سرمایہ کاری ہوئی،، رواں سال بھی پاکستان میں سب سے زیادہ رقم چنیوں نے ہی لگائی،، تاہم نئی چینی سرمایہ کاری بھی گزشتہ سال سے 20 فیصد کم رہی،، جبکہ امریکی اور برطانوی سرمایہ کار اسٹاک مارکیٹ اور حکومتی بانڈز میں پرانی سرمایہ کاری سے بھی 31 کروڑ ڈالر نکال کر لے گئے۔۔


شیئر کریں: