عراق میں سخت لاک ڈاؤن، بااثر آیت اللہ بھی کورونا وائرس کا شکار

شیئر کریں:

عراق میں کورونا وائرس نے پھر سے سر اٹھانا شروع کر دیا ہے جس کی وجہ سے حکومت نے انتہائی
سخت لاک ڈاون لگا دیا ہے۔ جمعہ، ہفتہ اور اتوار کو مکمل لاک ڈاؤن رہے گا۔
گزشتہ سال کے مقابلے میں رواں سال اور باالخصوص فروری میں کورونا کے کیسز دگنے ہو چکے ہیں۔
سب سے زیادہ متاثرہ شہر بغداد ہے۔

حکومت نے وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے انتہائی سخت انتظامات کیے ہیں بغیر ماسک باہر نکلنے
پر 25 ہزار دینار کا جرمانہ عائد کیا جارہا ہے۔ ماسک کی مانگ بڑھنے پر پاکستان کی طرح عراق میں
بھی قیمتیں آسمان پر پہنچا دی گئی ہیں۔ ایک ماسک ڈھائی ہزار دینار میں فروخت کیا جارہا ہے۔

چار کروڑ کی آبادی والے اس ملک میں کورونا سے اب تک 6 لاکھ 60 ہزار افراد متاثر اور 13 ہزار 200 اموات
ہو چکی ہیں۔
عراق کے چار آیت اللہ میں سے 91 سالہ آیت اللہ محمد الفیاض بھی کورونا وائرس کا شکار ہو گئے ہیں تاہم ان کی حالت خطرے سے باہر بتائی جارہی ہے۔


شیئر کریں: