بھارت میں صحافیوں کیخلاف بغاوت کے مقدمات درج

شیئر کریں:

بھارتی حکومت نے کسانوں کو پرتشدد مظاہروں کی ترغیب دینے کا
الزام عائد کرتے ہوئے صحافیوں کیخلاف مقدمات درج کیے گئے ہیں۔
مقدمات ریاست اترپردیش اور مدھیہ پردیش کی پولیس نے 26جنوری کو
مبینہ طور پر لال قلعے کی فصیل پر سکھ مذہب کا پرچم نصب کرنے اور
پرتشدد مظاہروں پر اکسانے کا الزام عائد کرتے ہوئے کانگریس پارٹی کے
سرکردہ رہنما ششی تھرور سمیت ملک کے دیگر 6 سرکردہ صحافیوں کے خلاف بغاوت کے مقدمات درج کیے ہیں۔

ایف آئی آر میں معروف صحافی راج دیپ سر دیسائی، نیشنل ہیرالڈ کے ایڈیٹر
مرنال پانڈے، قومی آوازا کے مدیر ظفر آغا اور کارواں میگزین سے وابستہ اننت ناتھ اور ونود جوز کے نام بھی شامل ہیں۔
دوسری جانب صحافیوں کی تنظیم ‘ایڈیٹرز گلڈ’ نے بھارتی انتہاء پسند حکومت کے اس اقدام کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے


شیئر کریں: