برطانیہ نے سرحدیں بند کرنے میں دیر کردی، نئی قسم کا خطرناک کورونا ہانگ کانگ سمیت دنیا بھر میں پھیل گیا

شیئر کریں:

انسان کو کورونا وائرس کے بعد ایک اور بڑا خطرہ لاحق ہوگیا
برطانیہ میں دریافت ہونے والا نئی قسم کا کورونا وائرس دنیا بھر میں پھیل گیا
ہانگ کانگ میں نئی قسم کے وائرس کے کیسیز سامنے آگئے
سائنس دانوں اور ریسرچرز کا کہنا ہے کہ برطانیہ نے بارڈرز بند کرنے میں دیر کردی
وائرس پہلے ہی دنیا بھر میں پھیل چکا ہے

برطانیہ پر نئے وائرس کا قہر، بارڈر پر گاڑیاں پھنس گئیں فوج طلب

سائنس دانوں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ برطانیہ میں دریافت ہونے والا مہلک وائرس امریکا میں بھی پہنچ چکا ہے۔
یاد رہے کہ برطانیہ میں کورونا وائرس کی نئی قسم دریافت ہوئی ہے
سائنس دانوں کا کہنا ہے کہ یہ وائرس کورونا سے 70 فیصد زیادہ خطرناک ہے
یہ وائرس کورونا کی نسبت بہت تیزی سے بھی پھیلتا ہے

برطانیہ کو دنیا بھر میں تنہائی کا سامنا، خطرناک وائرس کے بعد فضائی اور زمینی رابطہ منقطع

اس تباہ کن وائرس کے کیسیز سامنے آنے کے بعد برطانیہ کے ساتھ دنیا بھر کے ممالک نے اپنی سرحدیں بند کردیں ہیں
سرحدیں بند ہونے کی وجہ سے برطانیہ میں خوراک کی کمی کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے
برطانیہ کو نئی قسم کے وائرس سے بچانے اور شہریوں کی ٹیسٹنگ کرنے کے لیے فوج سے مدد طلب لی گئی ہے
برطانوی وزیراعظم نے فوج کو بڑے پیمانے پر ٹیسٹنگ کرنے کے احکامات جاری کردیے ہیں


شیئر کریں: