کورونا وائرس سے پشاور میں 2 ڈاکٹر اور شہید ہو گئے

شیئر کریں:

کورونا کی وبا سے شہادتوں کا سلسلہ جاری ہے اور روزآنہ ہی ڈاکٹرز بھی شہید ہو رہے ہیں۔
پشاور میں کورونا وائرس سے خیبر پختنخواہ میں لیڈی ڈاکٹر سمیت مزید دو ڈاکٹر شہید ہو گئے۔
اس طرح خیبر پختونخواہ میں شہید ڈاکٹرز کی تعداد بڑھ کر 31 تک جا پہنچی ہے۔

کوروناوائرس سےخیبر پختنخواہ میں ایک اور لیڈی ڈاکٹرشہید

پروفیسر ڈاکٹر الماس بیگم آفریدی پشاور کے نجی اسپتال نارتھ ویسٹ میں کووڈ 19 کے باعث
زیر علاج تھیں۔
پروفیسر ڈاکٹر الماس بیگم افریدی نے 2002 میں خیبر ٹیچنگ اسپتال پشاور میں آئی بی پی
کے خلاف احتجاجا استعفی دے دیا تھا۔

استعفی کے بعد وہ کبیر میڈیکل کالج 2005 میں بطور ہیڈ اف گائنی خدمات انجام دے رہی تھیں۔
اس کے ساتھ ساتھ ڈاکٹر الماس نصیر ٹیچنگ اسپتال میں بھی ملازمت کر رہی تھیں۔
ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن خیبرپختونخواہ کے مطابق آج ہی ان سے پہلے ڈاکٹر حسن شہزاد
ایوب ٹیچنگ اسپتال ایبٹ آباد میں شہید ہو گئے۔

خیبر پختونخواہ کے شہید ڈاکٹرز، طبی عملہ شہدا پیکیج اور رسک الاؤنس سے محروم

گزشتہ روز بھی ایک لیڈی ڈاکٹر شہید ہو گئی تھیں اور ڈاکٹرز مسلسل شہدا فنڈ اور ضروری
اشیا کی فراہمی کا مطالبہ کر رہے ہیں۔


شیئر کریں: