چنیوٹ میں کتابوں کی دکان پر بچی سے زیادتی، ایک شخص ویڈیو بناتا رہا لیکن بچی کو بچایا نہیں

شیئر کریں:

چنیوٹ سے قیصر علی شاہ

چنیوٹ کے علاقہ چناب نگر میں چالیس سالہ شخص نے آٹھ سالہ بچی کو کتابوں کی دوکان میں زیادتی
کا نشانہ بنا ڈالا۔
زیادتی کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تو پھر پولیس نے زیادتی کرنیوالے شخص کو گرفتار کیا۔
سعید احمد نے چناب نگر میں کتابوں کی دکان بنارکھی ہے مہرین فاطمہ پینسل خریدنے کے لئے
سعید احمد کی دکان میں آئی تھی۔
ظالم سعید نے بچی کو اپنی حواس کا نشانہ بنا ڈالا واقعہ کی ویڈیو محلہ دار نے بنالی۔
سوال یہاں یہ بھی ہے کہ جس شخص نے زیادتی ہوتے دیکھا اور ویڈیو بناتا رہا لیکن بچی کو نہ بچایا۔
شہریوں کو کہنا ہے اس شخص کو بھی پکڑنا چاہیے جس نے محض اپنی ویڈیو کے لیے بچی کو درندگی
کا شکار ہوتے ہوئے دیکھتا رہا۔
تھانہ چناب نگر پولیس نے سعید احمد کو گرفتار کر لیا اور بچی کے والد کی مدعیت میں مقدمہ بھی
درج کرلیا گیا۔
اس طرح کے واقعات معاشرے کے منہ پر کلنگ کا ٹیکہ ہیں‌ لیکن ایسے واقعات کو دیکھتے رہنا اور
اپنے کیمرہ میں‌ نظربند کرنے کی خاطر منہ رکھنا بھی ظلم اور جرم کے مترادف ہے۔
لوگوں‌ کا کہنا ہے ایسے شخص کو نشانہ عبرت بنانے کی ضرورت ہے جس نے اس بچی کی
عزت تار تار کرنے میں‌ اس ملعون شخص کا ساتھ دیا۔
ظلم دیکھ کر خاموش رہنے کا مطلب اس ظالم کے کام میں‌ وہ شخص بھی شریک ہوا ہے۔


شیئر کریں: