جمال خاشقجی قتل میں ملوث سعودی شہزادے کے قریبی ساتھیوں پر پابندیاں عائد

شیئر کریں:

سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے بعد سعودی شہزادہ محمد بن سلمان کی مشکلات کم نہ ہوئیں۔
برطانیہ نے صحافی کے قتل میں ملوث سعودی شہزادے کے قریبی لوگوں پر سخت پابندیاں عائد کردی ہیں۔
برطانیہ نے بیس سعودی شہریوں کے داخلے پر پابندی عائد کردی ہے۔
ان افراد میں سعودی شہزادے محمد بن سلمان کے انتہائی قریبی لوگ بھی ہیں۔
برطانیہ کا کہنا ہے کہ یہ تمام بیس افراد سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل اور انسانی حقوق کی پامالیوں میں ملوث ہیں۔
برطانیہ نے نہ صرف ان لوگوں کے داخلے پر پابندی عائد کی ہے بلکہ برطانیہ میں موجود ان کے اثاثے بھی منجمد کردیے ہیں۔
روس نے برطانیہ کو پابندیوں پر خبردار کرتے ہوئے وارننگ دی ہے کہ اسے پابندیوں کی وجہ شدید ردعمل کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

خاشقجی سعودی ولی عہد کے پیچھے، امریکا سے فنڈ واپس

صحافی جمال خاشقجی کو اکتوبر 2018 میں قتل کردیا گیا تھا۔
جمال خاشقجی کو استنبول میں سعودی سفارت خانے میں بےدردی
سے قتل کے ان کے جسم کی باقیات کو تلف کردیا گیا تھا۔
تحقیقات میں سامنا آیا تھا کہ صحافی جمال خاشقجی کو سعودی حکومت
کے خلاف لکھنے کی پاداش میں سعودی حکومت نے قتل کروایا۔
بعد میں یہ بھی سامنے آیا کہ سعودی شہزادہ محمد بن سلمان بھی جمال خاشقجی کے قتل میں ملوث ہے۔


شیئر کریں: