پی ایس ایل فرنچائز برائے فروخت،شعیب اختر مالک بننے کو تیار

شیئر کریں:

شعب اختر پی ایس ایل فرنچائز کے مالک بننے کا خواب دیکھنے لگے۔
پاکستان سپر لیگ کا اگلا ایڈیشن 16 سے 18 ماہ تک ممکن نہیں ہو سکے گا۔
ملتوی شدہ ناک آئوٹ اسٹیج کے میچز بھی اس سال ستمبر میں مشکل ہی ہیں۔
راولپنڈی ایکسپریس شعیب اختر نے انکشاف کیا ہے کہ پی ایس ایل فرنچائز کے
کچھ مالکان اپنی فرنچائز فروخت کرنا چاہتے ہیں۔
شعیب اختر کہتے ہیں میری باتیں کچھ لوگوں کو پسند نہیں آتیں لیکن میں انکشاف
کرنا چاہتا ہوں کہ پی ایس ایل مالی مسائل کا شکار ہے۔
بعض مالکان اپنی فرنچائز کے لیے برائے فروخت کا بورڈ اٹھائے ہوئے ہیں۔
کورونا وائرس کی وجہ سے ہر طرف مالی مشکلات ہیں۔
ورلڈ ٹی 20 ملتوی ہونے جا رہا ہے اور ایسے میں پاکستان سپر لیگ کا اگلا
ایڈیشن 8 ماہ بعد ممکن نہیں لگتا۔
پی سی بی ان حالات میں کیسے مزید پیسہ مانگ سکے گا؟
پی سی بی کی پلاننگ اپنی جگہ اہم ہو گی لیکن مجھے یہ سب ہوتا دکھائی نہیں دیتا۔
شعیب اختر پاکستان سپر لیگ کی ایک ٹیم خریدنا چاہتے ہیں اور موقع ملا تو ضرور خریدیں گے۔
پاکستان سپر لیگ اس سال پہلی مرتبہ پاکستان میں کامیابی سے ہوئی۔
تمام میچز ہائوس فل رہے لیکن کورونا کی وجہ سے سیمی فائنلز اور فائنل نہیں ہوسکے۔


شیئر کریں: