ایشیا کی سب سے مہنگی 3 ارب 20 کروڑ ڈالر کی طلاق

شیئر کریں:

چین میں ایشیا کی سب سے مہنگی طلاق نے خاتون کو راتوں رات ارب پتی بنا دیا۔
چیئرمین شین زہن کانگٹائی بائیولاجیکل پراڈکسٹس کمپنی کے چیئرمین ڈو ویم ان نے اپنی سابقہ اہلیہ
یووان لی پنگ کو 3ارب 20 کروڑ ڈالر مالیت کے شئیر منتقل کردیے۔

بیوی کوشئیرز منتقل کرنے کے بعد ڈو اپنی آدھی رقم سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔
سابقہ بیوی سے ہونے والے معاہدے سے پہلے ڈو ساڑھے چھ ارب ڈالر سے زائد رقم کے مالک تھے جو
اب کم ہو کر تین ارب ڈالر رہ گئی ہے۔
لکی علی اداکارہ انجمن کو طلاق دے دی
وڈ کی کمپنی رواں برس کے آخر تک کورونا وائرس کی ویکسین بنانے کا دعوی کر چکی ہے۔
ڈو کا شمار چین کے امیر ترین لوگوں میں ہوتا ہے۔ چین میں ہونے والی یہ اپنی طرز کی پہلی طلاق نہیں
اس سے پہلے بھی کئی مہنگی طلاقیں ہوچکی ہیں۔

2002 میں چین کی امیر ترین خاتون وویاجون نے طلاق کے بعد اپنے شوہر کو دو ارب ڈالر سے زائد رقم منتقل کی۔
دنیا کی تاریخ میں سب سے مہنگی طلاق ایمازون کی مالک جیف بینز کی تھی۔
طلاق کے وقت جیف نے اپنی سابقہ اہلیہ کو 48 ارب ڈالر کی خطیر رقم ادا کی۔


شیئر کریں: