جنوبی امریکا میں کفن باکس کم پڑ گئے

شیئر کریں:

جنوبی امریکا کے ملک ایکواڈور میں تدفین کے لیے میت باکس کم پڑ گئے ہیں۔
کورونا وائرس کوڈ 19 نے دنیا بھر کا نظام الٹ پلٹ کر کے رکھ دیا ہے۔
انسان کے لیے فروری کے مہینے سے میڈیکل کی سہولیات سے لے کر تدفین کے عمل تک انسان کو انتہائی مشکلات کا سامنا ہے۔
کرہ ارض پر انسان کو علاج کی بہتر سہولت میسر ہے اور نہ ہی آخری آرام گاہ کے سفر کی سہولت میسر آرہی ہے۔
ایکواڈور میں لاشیں اٹھانے والوں اور گور کنوں کا کام اس قدر بڑھ چکا ہے کہ اس شعبہ سے تعلق رکھنے والوں کے پاس وقت اور ذرائع کم پڑ گئے ہیں۔
اس وبا سے پہلے آخری رسومات کی کمپنیز بہتر انتظامات کیا کرتی تھیں لیکن اب ان کے پاس وقت ہی نہیں ہے۔
اچھے معیار کے میت باکس بھی نہیں ہیں ملک میں 15 گھنٹے کے مسلسل کرفیو کی وجہ سے ہر چیز کی قلت پیدا ہو چکی ہے۔
اس وقت کم تر معیار کا باکس بھی کم سے کم 400 ڈالر میں میسر ہے۔
جنوبی امریکا کے اس ملک کی کل آبادی ایک کروڑ 70 لاکھ کے قریب ہے۔
ایکواڈر میں اب تک کوڈ 19 سے 191 افراد ہلاک اور تین ہزار 747 متاثر ہو چکے ہیں۔


شیئر کریں: