لیڈی ریڈنگ اسپتال ہاسٹل خالی کرانے پر ہنگامہ کا خدشہ

شیئر کریں:

خیبرپختونخواہ کے سب بڑے تدریسی لیڈی ریڈنگ اسپتال کا ہاسٹل میل ڈاکٹروں سے خالی کرانے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔

تمام ہاوس آفیسرز، میڈیکل آفیسر اور ٹرینی میڈیکل آفیسرز کو ہاسٹل کے کمرے ایک مہینے میں خالی کرنے ہوں گے۔

اسپتال انتظامیہ نے ہاسٹل میں رہنے والےتمام میل ڈاکٹروں کو مراسلہ ارسال کردیا ہے۔ کمرے خالی کرانے کا فیصلہ بورڈ آگ گورنرز نے کیا ہے۔اسپتال ترجمان کے مطابق اسپتال کے پاس فی میل اسٹاف زیادہ ہیں اس لیے کمرے فی میل اسٹاف اور دیگر اضلاع کے ملازمین دیئے جائیں گے۔

اب ایم اوز، ٹی ایم اوز اور ہاوس جاب افیسرز رہائش کے خود زمہ دار ہوں گے۔ ہاسٹل کے کمرے خالی کرانے پر ڈاکٹرز تنظیمیں متحرک ہو گئیں اور انہوں نے احتجاج کا اعلان کر دیا ہے۔

پی ڈی اے کا کہنا ہے ککہ ہاسٹل میں دور دراز اضلاع کے ڈاکٹرز رہائش پزیر ہیں وہ فیصلہ نہیں مانتے۔اسپتال انتظامیہ کمرے خالی کروا کر اپنوں کو نوازنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔

پی ڈی اے کا کہنا ہے ہاسٹل کے کمروں کو کسی طور پر خالی نہیں کریں گے۔


شیئر کریں: