جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے مرحومین سے ملاقات کریں

شیئر کریں:

جنوبی کوریا میں ورچوئل ریالِیٹی کے زریعے ایک ماں کو مرحومہ بیٹی سے ملایا گیا.
ماں سات سال کی بیٹی کو یاد کر کے بِلک بِلک کر روتی رہیں

ٹیکنالوجی کی مدد سے انسان اپنے بچھڑے ہوئے پیاروں کو ایک بار پھر اپنے درمیان محسوس تو کر سکتا ہے.
لیکن چھو نہیں سکتا۔ ایسا ہی ایک منظر جنوبی کوریا کے ایم بی سی ٹی وی کی ایک ڈاکیومنٹری میں دیکھنے کو ملا۔

جانگ جی نامی خاتون کی سات سالہ بچی کچھ عرصہ قبل ایک مہلک بیماری کا شکار ہو کر دنیا سے چل بسی۔
خاتون نے ایک اسٹوڈیو میں ورچوئل ریالِیٹی گوگلز کے توسط سے اپنی مرحومہ بچی کو دیکھا۔

بچی اپنے گھر کے قریب اچانک جھاڑیوں سے نکل کر ماں کے سامنے آ جاتی ہے۔
بچی کہتی ہے،،، ماما ! آپ کہاں تھیں،، کیا آپ میرے بارے میں سوچ رہی تھیں ؟؟
بچی کو دیکھ کرماں خود پر قابو نہ رکھ سکی،، ضبط کا بندھن ٹوٹا تو ماں بلک بلک کر روتے ہوئے ننھی بیٹی کو گلے لگانے کے لیے آگے بڑھی
تھرتھراتے ہاتھوں اور کپکپاتی آواز میں بولی میں تمھیں صرف ایک بار چھونا چاہتی ہوں ۔

میرے قریب آو،، میں تمھیں بہت مس کرتی ہوں ۔
جانگ جی نے کہا انھیں بہت بچی سے بچھڑنے کا شدید غم ہے۔
لیکن ورچوئل ریالِیٹی کے زریعے اپنی بچی کو دیکھ کر ان کے دل کو سکون ملا۔
وی آر اسٹوڈیو کے ڈائریکٹر لی نے کہا ہم نے یہ دیکھنے کے لیے تجربہ کیا کہ کیا ٹیکنالوجی سے دلوں کو سکون مل سکتا ہے؟


شیئر کریں: