شیخ رید اسپتال میں جگر کی پیوند کاری کے دوران ڈاکٹروں کی غفلت، 3 افراد کی جان چلی گئی

شیخ رید اسپتال
شیئر کریں:

شیخ رید اسپتال میں جگر کی پیوند کاری میں ڈاکٹروں کی نااہلی سے 3 افراد کی جان چلی گئی ۔10 دنوں کے دوران 2 مریض ریاض حسین اور نسیم بی بی جاں بحق ہوئے .جبکہ رشتہ دار کو جگر دینے والا ڈونرعمر فاروق بھی جان سے گیا۔

اسپتال زرائع کے مطابق ثروت سلطانہ کو اس کے بیٹے عمر فاروق نے جگر کا عطیہ دیا
جس کے بعد اسکی حالت تشویشناک ہو گئی۔عمر فاروق چند دن اسپتال میں زیر علاج رہنے کے بعد زندگی کی بازی ہارگیا باقی دونوں مریضوں کی اموات بھی ایسے ہی ہوئی.

پنجاب ہیومن اورگنز ٹرانسپلانٹیشن اتھارٹی کی جانب سے معاملہ پر چئیر پرسن پروفیسر آف انھستھزیا سمز نائلہ اسد کی نگرانی میں چھ رکنی کمیٹی تشکیل دی ہے۔ جن میں ڈاکٹر عزیر قریشی، ڈاکٹر سلمان جاوید، ڈائریکٹر لیگل پیہوٹا عمران احمد، ڈپٹی ڈائریکٹر پیہوٹا عدنان بھٹی اور ڈاکٹر مدثر ظہور شامل ہیں۔

کمیٹی کو 4 روز میں اپنی رپورٹ ڈی جی پیہوٹا کو پیش کرنے کی ہدایت کی گئی ہےمتعدد ہلاکتوں کے باعث پنجاب ہیومن اورگنز ٹرانسپلانٹیشن اتھارٹی نے شیخ زید اسپتال میں تاحکم ثانی پیوندکاری پر پابندی عائد کردی ہے.


شیئر کریں: