ایران کا مقابلہ کرنے کیلئے عراق میں امریکی میزائل نصب ہوں گے

شیئر کریں:

جنگ کی صورت میں ایران کے میزائل ناکارہ بنانے کے لیے امریکا نے عراق میں پیٹریاٹ میزائل سسٹم نصب کرنے کا اعلان کیا ہے۔
پینٹاگون میں امریکی سیکریٹری دفاع مارک ایسپر نے کہا ہے کہ عراقی حکومت کی منظوری کے بعد
امریکا عراق میں پیٹریات میزائل سسٹم نصب کرے گا۔
اس سلسلے میں عراقی حکومت کی اجازت کے ساتھ ساتھ کچھ آپریشنل اور ٹیکٹیکل معاملات طے ہونا ابھی باقی ہیں۔
اس موقع پر امریکی فوج کے چئیرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف جنرل مارک ملی نے کہا عراقی
حکومت کے ساتھ پیٹریاٹ دفاعی نظام کی تنصیب پر بات چیت جاری ہے۔

مزید پڑھیے:https://www.khabarwalay.com/2020/01/08/14404/ ایران نے امریکا پر حملہ کر دیا

جنرل مارک ملی نے کہا اگر اربیل اور الاسد ائیربیس پر پیٹریاٹ میزائل نصب ہوتے تو ایرانی بلیسٹک
میزائلوں کو فضاء میں تباہ کیا جا سکتا تھا۔
کیونکہ پیٹریات دفاعی نظام اسی مقصد کے لیے بنایا گیا ہے۔
ایک سوال پر جنرل ملی نے کہا امریکا کو عراق میں پیٹریاٹ دفاعی نظام نصب کرنے کی ضرورت ہے۔
امریکی سیکریٹری دفاع نے کہا کہ کمانڈر مارک ملی عراق میں پیٹریات دفاعی نظام کی ضرورت محسوس کرتے ہیں
اور ایرانی حملے کے بعد وہ اس ضمن میں مارک ملی کی حمایت کرتے ہیں۔

 

مزید پڑھیے: https://www.khabarwalay.com/2020/01/17/15519/ایران حملے کے 8 روز بعد امریکی فوجیوں کے زخمی ہونے کی تصدیق

 

عراق میں ایرانی میزائل حملے میں زخمی ہونے والے امریکیوں سے متعلق سوال پر جنرل ملی نے کہا
تمام زخمی فوجیوں کو ہلکی دماغی چوٹیں آئی تھیں۔


شیئر کریں: