یکم فروری سے نئے ڈی جی آئی ایس پی آر اپنی ذمہ داریاں سنبھالیں گے

شیئر کریں:

اسلام آباد میں‌صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ میڈیا میں میری بنیادی ٹیم رہے۔
ڈیفنس رپورٹرز نے بھر پور طریقے سے افواج پاکستان کی رپورٹنگ کی۔
ڈیفنس رپوٹرز نے ذمہ دارانہ رپورٹنگ سے افواج کے جذبہ کو مظبوط کیا۔
میجر جنرل آصف غفور کا یہ بھی کہنا تھا کہ پاکستان نے پچھلی دو دہائیوں میں دہشت گردی کے
خلاف بقا کی جنگ لڑی۔میڈیا کا افواج پاکستان کی کامیابی میں اہم کردار رہا۔
میجر جنرل آصف غفور نے بتایا کہ میڈیا نے افواج اور شہیدوں کے لواحقین کے دل جیتے۔
فروری 2019 میں پاک بھارت جنگ دستک دے چکی تھی۔
افواج پاکستان کی تیاری، موثر جواب نے امن کا راستہ ہموار کیا۔
جنرل قمر باجوہ کی سُپیریر ملٹری سٹریٹیجی نے جنوبی ایشیا کو بہت بڑی تباہی سے بچایا۔
ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایاکہ مسلط شدہ جنگ کا بھرپور جواب دیں گے۔
انڈین لیڈر شپ کہتی ہے 7-10دن میں پاکستان کو ختم کر دیں گے۔
بات صرف 7-10دِن کی نہیں اس سے پہلے اور بعد کی بھی ہے۔
پہلے بھی کہا تھا جنگ شروع آپ کریں گے، ختم ہم کریں گے۔
دُنیا کو بھی اس خطرے کا ادراک ہو نا چاہیے۔
ملٹری ترجمان پالیسی سے مبرا کوئی بات نہیں کر سکتا۔
ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ اگر‘بھارتی’میرے جانے پر خوش ہیں تو میرے لیے یہ اعزاز ہے۔
آپ سب کے تعاون کا شکریہ، میڈیا کا شکریہ۔ یکم فروری سے نئے ڈی جی اپنی ذمہ داریاں سنبھالیں گے۔


شیئر کریں: