آٹا اور گندم  بیچنے والا ملک 8 سال بعد درآمد کرے گا، مزید مہنگائی ہوگی ‬

شیئر کریں:

‫حکومت کی مس مینجمنٹ یا کچھ اور۔ سال میں پاکستان نے  سات لاکھ ٹن سے زائد گندم برآمد کی۔ ‬
‫اب ملکی ضروریات کے لیے دوبارہ درآمد کرنے پر غور شروع کر دیا گیا ہے۔ ‬
‫دوسرے ملکوں کو آٹا اور گندم  بیچنے والا ملک 8 سال بعد گندم درآمد کرے گا۔‬

ذرائع کے مطابق زرعی زمینوں‌پر بنائی جانے والی ہاؤسنگ سوسائٹیز نے اپنے رنگ دیکھانے شروع کر دیے ہیں۔‬
‫پاکستان میں گزشتہ کئی سالوں سے  ضرورت سے زیادہ گندم پیدا کی جا رہی تھی۔‬
‫جنوری 2019 میں پاکستان کے پاس ضرورت سے 30 لاکھ ٹن زیادہ گندم کا اندازہ لگایا گیا تھا۔‬
‫ لیکن گندم کی برآمد کی اجازت اور گندم اور آٹے کی اسمگلنگ کے باعث اس سال جنوری 2020 میں
گندم درآمد کرنے پر غور شروع ہو گیا۔‬
‫زرائع کے مطابق 2019 کے سیزن میں بنیادی طور پر پنجاب اور پاسکو نے ہی گندم کی خریداری کی۔‬
‫باقی صوبوں کی طرف سے ضرورت کے مطابق گندم کی خریداری نہیں کی گئی۔ ‬

‫ذرائع کے مطابق پنجاب کے پاس اس وقت بھی تقریبا 24 لاکھ ٹن گندم موجود ہے جو نئی فصل آنے تک
پنجاب کی ضرورت سے 4 سے 5 لاکھ ٹن زیادہ ہے۔‬
‫باقی صوبوں میں صورتحال مختلف ہونے کے باعث وفاقی حکومت نے سندھ کو 3 لاکھ ٹن گندم
درآمد کرنے کی اجازت دینے کا اصولی فیصلہ کیا ہے۔‬
‫پاکستان نے گزشتہ سوا سال کے دوران 7 لاکھ 37 ہزار ٹن گندم برآمد بھی کی۔‬
‫گندم کی درآّمد کی صورت میں پاکستان 8 سال بعد گندم درآمد کرنے والا ملک بنے گا۔


شیئر کریں: