January 16, 2020 at 8:45 pm

‫غیر ملکی سرمایہ کاروں کی طرف سے حکومتی ٹی بلز کی خریداری کے باعث ہفتے کے دوران مرکزی بینک کے ذخائر میں 8 کروڑ سے زائد ڈالر کا اضافہ ہو گیا۔ تاہم کمرشل بینکوں کے پاس ڈالرز میں سوا 4 کروڑ ڈالر سے زائد کی کمی رکارڈ کی گئی۔‬
‎‫اسٹیٹ بینک کے مطابق گزشتہ ہفتے کے دوران مرکزی بینک کے پاس زرمبادلہ کے ذخائر میں 8 کروڑ 23 لاکھ ڈالر کا اضافہ رکارڈ کیا گیااور ان کا حجم 11 ارب 58 کروڑ 60 لاکھ ڈالر ہو گیا۔‬
‎‫تاہم کمرشل بینکوں کے پاس ڈالروں میں 4 کروڑ 35 لاکھ ڈالر کی کمی دیکھی گئی،، اور ان کا حجم 6 ارب 53 کروڑ 76 لاکھ ڈالر رہ گیا،، جس کی وجہ سے اس دوران زرمبادلہ کے مجموعی ذخائر میں 3 کروڑ 88 لاکھ ڈالر کا اضافہ ہی ہوا۔ اور ان کا حجم 18 ارب 12 کروڑ 36 لاکھ ڈالر ہو گیا۔‬
‎‫رواں مالی سال کے پہلے چھ ماہ کے دوران حکومت کی طرف سے آئی ایم ایف،ایشیائی ترقیاتی بینک اور دوسرے مالیاتی اداروں اور غیر ملکی سرمایہ کاروں سے چھ ارب ڈالر سے زیادہ کا نیا قرض لینے کے باوجود اب تک زرمبادلہ کے مجموعی ذخائر میں حقیقی طور پر 3 ارب 63 کروڑ ڈالر کا اضافہ ہی رکارڈ کیا گیا۔

Facebook Comments