January 16, 2020 at 8:41 pm

کوئٹہ کی ایڈیشنل سیشن کورٹ نے بلوچستان عوامی پارٹی کے رئنماء سینیٹر سرفراز بگٹی کوگرفتار کرنے کا حکم جاری کیا ہے، سرفراز بگٹی اور ان کے ساتھیوں کے خلاف بچی کا اغواء کا مقدمہ بھی درج ہے۔
کوئٹہ میں بچی کے اغواء میں معاونت سے متعلق کیس میں ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کو ئٹہ کی عدالت نے سابق وزیر داخلہ بلوچستان اور سینیٹر سرفراز بگٹی کو گرفتار کرنے کا حکم صادر فرما دیا۔ایڈیشنل سیشن کورٹ نے بچی کے اغواء میں معاونت سے متعلق کیس میں سینیٹر سرفراز بگٹی کی ضمانت کی درخواست خارج کرتے ہوئے انہیں گرفتار کرنے کا حکم دیا۔
جس وقت عدالت نے گرفتاری کا حکم دیا تو بلوچستان عوامی پارٹی کے سینیٹر سرفرار بگٹی عدالت میں موجود تھے تاہم سرفراز بگٹی گرفتاری دیئے بغیر ہی عدالت سے روانہ ہو گئے۔
فیملی کورٹ نے بچی کی والدہ کی وفات کے بعد نانی کو بچی حوالے کی تھی سرفراز بگٹی نے کہا کہ انکا اغواء سے کوئ تعلق نہیں ہے غیر ضروری طور پر اس کو اغواء کے اس بے بنیاد مقدمے میں شامل کیا گیا ہے تاہم وہ جمعہ کے روز بلوچستان ہائ کورٹ سے ضمانت کرواکیں گے

Facebook Comments