January 16, 2020 at 10:56 am

ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے نیوکلیئر ڈیل پر عملدرآمد کا ایک بار پھر مطالبہ کردیا۔
امریکی صدرنے ایران کو نئے جوہری معاہدے کی پیش کش کی تھی۔
اور معاہدے کا نام ٹرمپ ڈیل تجویز کیا تھا۔
ایرانی صدر کا کہنا ہے کہ ایران جوہری معاہدے پر دنیا کی چھ طاقتوں یورپی یونین اور اقوام متحدہ نے کردار ادا کیا تھا۔
امریکی صدر کی جانب سے نئی ڈیل کی باتیں بین الاقوامی قوانین سے مذاق کے مترادف ہے۔
آج ٹرمپ ڈیل کی بات کی جارہی ہے کل بائیڈن یا کوئی اور ڈیل کی بات ہوگی۔
امریکا کی جانب سے عالمی قوانین کو مذاق بنانے پر بین الاقومی برادری کی خاموشی افسوس ناک ہے۔
ایران عالمی معاہدوں کے مطابق اپنا جوہری پروگرام جاری رکھے گا۔

Facebook Comments