ورلڈ بینک نے پاکستان کی اقتصادی ترقی کی شرح کا ہدف کم کردیا‬

شیئر کریں:

عالمی بینک نے پاکستان کی شرح نمو کے تخمینے ‬ میں کمی کر دی ہے۔ ‬
‎‫حکومت نے تو رواں مالی سال اقتصادی ترقی کا ہدف 4 فیصد مقرر کر رکھا ہے لیکن عالمی بینک کا اندازہ ہے کہ رواں مالی سال اقتصادی ترقی کی شرح صرف 2.4 فیصد تک رہنے کا امکان ہے۔‬
‎‫ورلڈ بینک کی تازہ رپورٹ میں بینک نے امکان ظاہر کیا ہے کہ سخت مانیٹری پالیسی کی وجہ سے رواں مالی سال پاکستان کی سالانہ شرح نمو 2.4 فیصد تک رہے گی۔ ‬
‎‫بینک نے جون 2019 میں اقتصادی ترقی کی شرح 2.7 فیصد ہونے کا امکان ظاہر کیا تھا۔ ‬
‎‫بینک کے مطابق اگلے مالی سال 2021 میں اقتصادی ترقی کی شرح 3 فیصد تک پہنچنے کا امکان ہےتاہم یہ شرح بھی پہلے تخمینے سے ایک فیصد کم ہے،، جبکہ مالی سال 2022 میں شرح نمو 3.9 فیصد تک جا سکتی ہے۔ ‬
‎‫رپورٹ کے مطابق جنوبی ایشیا میں پاکستان کے سوا دوسرے مملک میں مہنگائی کی شرح بھی کنٹرول میں رہی۔ ‬
‎‫پاکستان میں ٹیکسوں کی وصولی کے نظام میں اصلاحات نا ہونے کی وجہ سے مالیاتی خسارے میں اضافہ ہو سکتا ہے۔ ‬
‎‫عالمی بینک نے  رواں سال بنگلہ دیش میں ترقی کی شرح 7 فیصد سے زیادہ رہنے اور بھارت میں شرح نمو 5 فیصد تک کم ہونے کا امکان ظاہر کیا ہے۔ ‬
‎‫عالمی بینک کے مطابق پاکستان اور بھارت میں اقتصادی سرگرمیاں سست ہونے کی وجہ سے مجموعی طور پر جنوبی ایشا کی شرح نمو بھی 2019 میں پہلے  تخمینے سے 1.5 فیصد کم 4.9 فیصد تک رہنے کا اندازہ ہے۔‬
‎‫ سال 2020 میں خطے کی شرح نمو 5.5 فیصد تک بلند ہونے کا امکان ہے۔


شیئر کریں: