ٹرمپ کی قیمت 8 کروڑ ڈالر مقرر

شیئر کریں:

امریکا کی جانب سے ایران کے 52 ثقافتی مقامات پر
حملوں کی دھمکی کے بعد ایران نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ
کے سر کی قیمت مقرر کر دی ہے۔ برطانوی اخبار کی
رپورٹ کے مطابق جو بھی ٹرمپ کا سر لائے گا اسے
8 کروڑ ڈالر انعامی رقم سرکاری اعزاز کے ساتھ دی
جائے گی۔ ایران نے ٹرمپ کی دھمکیوں کو گیدڑ بھبکیاں
قرار دیتے ہوئے مسترد کردیا ہے۔ ساتھ ہی اس نے خبردار
کیا ہے کہ خطے میں امریکی مفادات پر زبردست جوابی
حملے کیے جائیں گے اور وائٹ ہاؤس بھی ان کی پہنچ
سے دور نہیں ہے۔
اتوار کو سردار قاسم سلیمانی کے جنازہ ایرانی قوم سے
اپیل کی گئی کہ ٹرمپ کے قاتل کو انعامی رقم کی
فراہمی یقینی بنانے کے لیے وہ کم از کم ایک ڈالر عطیہ
ضرور دیں۔ بہرحال حکومت کی سطح پر اس اعلان
کی تردید یا حمایت میں کوئی بیان جاری نہیں ہوا۔
ایرانی قوم قاسم سلیمانی سے والہانہ محبت کرتی تھی
اسی بنیاد پر لوگوں نے اپنی طرف سے اس نوعیت کا
اعلان کیا ہے۔ یاد رہے شاتم رسول سلمان رشدی کے
سرکی بھی قیمت مقرر کی گئی تھی لیکن آج تک اس
کا کوئی کچھ نہیں بگاڑ سکا۔ بس اس طرح کے
اعلانات لوگوں کی جذباتی وابستگی کے تحت
کر دیے جاتے ہیں۔


شیئر کریں: