ایران امریکا کشیدگی دنیا کی معیشت کو لے بیٹھی

شیئر کریں:

عراق میں امریکی فضائی حملے سے ایران کی
پاسداران انقلاب کی قدس فورس کے سربراہ
میجر جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت کے
اثرات دنیا بھر کی معیشت پر پڑنے لگے ہیں۔
عرب ممالک میں تیل کی پیداوار بری طرح
متاثر ہورہی ہے۔ تیل کی قیمت اوپر جاچکی ہے۔
دنیا کی سب سے بڑی سعودی تیل کی
ریفائنری آرامکو کا کوئی حال نہیں۔
سعودی عرب کی حکومت نے ایک ماہ پہلے
ہی آرامکو کے شیئر فروخت کیے تھے ان
کی ویلیو بد سے بدتر ہو چکی ہے۔
اسی طرح پاکستان اسٹاک ایکس چینج بھی
خطے پر منڈلانے والی جنگ کے آثار کی
لپیٹ میں آچکی ہے۔ کاروبار کے پہلے روز
پاکستان اسٹاک ایکس چینج کے 100 انڈیکس
میں 778 پوائنٹس کی کمی دیکھی گئی ہے۔
جس کے بعد ایک موقع پر مارکیٹ41 ہزار544
کی سطح پر پہنچ گئی۔ یاد رہے جمعہ کو
بھی مارکیٹ مائنس میں بند ہوئی تھی۔

دوسری جانب عالمی مارکیٹ میں خام
تیل 3 ڈالر فی بیرل مہنگا ہو چکا ہے۔
برینٹ کروڈآئل 2.14 ڈالر اضافے کے
ساتھ 68.39 ڈالر فی بیرل تک پہنچ گیا۔
نیویارک مرکنٹائل ایکس چینج میں
الیکٹرانک ٹریڈنگ میں بینچ مارک
یو ایس کروڈ 1.87ڈالراضافے کے
ساتھ 63.05 ڈالر فی بیرل پر پہنچ گیا۔
۔ گزشتہ روز 12 سینٹس کمی
کے ساتھ 61.18 ڈالر پر بند ہوا تھا

ساتھ ساتھ دنیا بھر کی معیشت پر مندی
کے بادل منڈلانے لگے ہیں۔ دنیا کی کئی
ڈیلز ممکنہ جنگ کی وجہ سے تاخیر کی
شکار ہو گئی ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے اس
نئی صورت حال سے سب سے زیادہ مشرق
وسطی اور خلیجی ممالک متاثر ہوں گے۔
امریکا کے اندر خود ڈونلڈ ٹرمپ کے
خلاف فضا ہو چکی ہے۔


شیئر کریں: