پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم کی دوریاں دور؟

شیئر کریں:

بلاو ل بھٹو کی متحدہ کو سندھ حکومت میں شمولیت
کی پیشکش کے بعد پیپلز پارٹی حرکت میں آگئی ہے۔
پارٹی ذرائع کے مطابق پیپلزپارٹی نے ایم کیوایم سے
براہ راست مذاکرات کا فیصلہ کیا ہے۔ جلد پارٹی وفد
ایم کیوایم کے مرکز کا دورہ کرے گا۔

ذرائع نے بتایا کہ پیپلزپارٹی کی اعلی قیادت نے ایم کیوایم
سے تسلسل کے ساتھ مذاکرات شروع کرنے کی ہدایت کی
ہے۔ایم کیوایم کے ساتھ بات چیت میں آئینی،سیاسی اور
انتظامی پیکج پر بات ہوگی۔

پیپلزپارٹی سندھ میں نیا بلدیاتی ایکٹ لانے کو بھی تیار
ہے۔ جس میں میئرز،چیئرمینز کو مزید مالی وانتظامی اختیارات
دئیے جائیں گے۔کراچی واٹر اینڈ سیوریج کو میئر کے ماتحت کرنے
پر بھی غور ہوسکتا ہے۔

ابھی خبر ہی آئی تھی کہ ایم کیوایم پاکستان کا موقف بھی
آگیا۔ پارٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ ایم کیو ایم پاکستان
بلاول بھٹو زرداری کی پیش کش کو سنجیدہ نہیں لے رہی۔

پیپلز پارٹی جب تک عملی اقدام نہیں اٹھا ئے گی مذاکرات
نہیں ہوں گے۔ ایم کیوایم ذرائع کے مطابق پہلے بلدیاتی
ایکٹ میں ترمیم کی جائے ۔پھر بات چیت شروع ہوگی۔
ماضی کے تجر بے کی بنیاد پر، پارٹی میں اکثر یت پیپلز پارٹی
سے اتحاد کی مخالف ہے۔ پیپلز پارٹی نے ایم کیو ایم کی شرائط
پر غور شروع کردیا ۔


شیئر کریں: