بشیر اے میمن مستعفی کیوں ہوئے؟

شیئر کریں:

سابق ڈی جی ایف آئی اے بشیر میمن عہدے سے ہٹائے جانے پر برہم۔ ملازمت سے استعفی دےدیا۔ جو انتیس نومبر کو
اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کو ارسال کیا گیا تھا۔
سابق ڈی جی ،ایف آئی اے بشیر میمن ایک ماہ سے زائد عرصے ہوا دفتری امور میں غیر فعال تھے۔

ہٹائے گئے ڈی جی ایف آئی اے بشیر میمن نے اپنے استعفے میں تحریر کیا ہے کہ عام طور پر ریٹائرمنٹ کے قریب افسر کو عہدے سے نہیں ہٹایا جاتا۔لیکن انہی اس روایت سے محروم رکھ کرناپسندیدگی کا اظہار کیا گیا ۔
اسی تناظر وہ ملازمت سے استعفی دے رہے ہیں۔ انہوں نے اپنے استعفے کے اختتام پر پاکستان زندہ آباد کا نعرہ بھی درج کیا ہے۔
بشیر میمن گریڈ بائیس کے افسر تھے اور سات اگست دوہزار سترہ سے ڈی جی ،ایف آئی اے کے عہدے پر کام کررہے تھے۔
عہدے سے ہٹائے جانے کے وقت ان کی مدت ملازمت میں صرف سولہ دن رہے گئے تھے۔بشیر میمن نےڈی جی ایف آئی کے عہدے پر رہتے ہوئے جعلی اکاونٹس کیس سمیت متعدد اہم کیسز کی تحقیقات کیں۔
سپریم کورٹ نے اصغر خان کیس کے دوران حکم دیا تھا کہ کیس کی تحقیقات مکمل ہونے تک انہیں تبدیل نہ کیا جائے۔
دوران کیرئیر شاندار خدمات پرانہیں پاکستان پولیس میڈل سے بھی نوازا گیا۔۔


شیئر کریں: