سندھ میں وڈیرا شاہی تعلیم کی تباہی کی اصل ذمہ دار

شیئر کریں:


تحریر: مظفر علی عباسی
حکومت کا سندھ کی تعلیم،کاپی کلچر اور سرکاری اسکولوں پر دھیان نہ ہونے کے برابر ہے بات کریں بجٹ کی تو ہر سال سندھ حکومت بجٹ تو ڈبل رکھتی ہے پر خرچ پتہ نہیں کہاں ہوتا ہے
اسکولوں پر وڈیروں کے ایم پی ایس کے یا سیاسی جماعتوں کے تو قبضے سنے ہونگے دیکھے ہونگے ، آج میں آپ کو ایک نہیں بلکہ دو سرکاری اسکولوں پر قبضہ کا بتا رہا ہوں
ضلع نوشہرو فیروز ویسے تو تعلیم کے حوالے سے پہچانا جاتا ہے پر افسوس میرا جانا ایک گائوں میں ہوا جو نوشہرو فیروز کے شہر ٹھارو شاہ کا ہے جس کا نام چھٹو سہتو تھا جہاں پر میں دیکھ کر حیران رہ گیا ہے کہ بچے اسکول کے ٹائم پر کھیل میں مگن ہیں ، میں نے جب گائوں والوں سے پوچھا کہ بچوں کو اسکول نہیں بھیجتے کیا؟ تو ہنس کر کہنے لگے صاحب اسکول ہی نہیں ہے تو پڑھیں گے کہاں؟ تب ہی میری نظر اسکول کی بلڈنگ پر پڑی میں نے پوچھا بلڈنگ تو سامنے ہے اس نے کہا جی ہاں یہ اسکول کی عمارت تو بلکل ہے لیکن یہاں‌انٹری کسی کی نہیں ہے،

یہ بات سنے کے بعد جب میں‌ بلڈنگ کے اندر داخل ہوا تو دیکھ کر حیران رہ گیا کہ 1979 میں بنی بلڈنگ جس پر وڈیرہ کا قبضہ تھا اور بلڈنگ ایک نہیں بلکہ دو تھیں۔ ایک گرلز اسکول کی جو گودام میں تبدیل ہوگئی تھی ، اور زیادہ حیران تب ہوئی جب دیکھا کے گائوں کے وڈیرے او یو سی چیئر مین صاحب کے ہاری کسان وڈیرہ صاحب کے فصلوں کی کٹائی کرکے اسکول کی بلڈنگ میں مہندی کے فصل کو صاف کر رہے تھے

اسکول میں وڈیرے نے اپنے ٹریکٹر کا سامان ، ہل ، بھوسہ ، اور مہندی ، اور بھینسے باندھ دیں اسکول کا فرنیچر اسکول کے کمروں سے باہر دھوپ میں نکال کر پھینک دیا۔ وڈیرے اور یوسی چیئر مین سے رابطہ کرنے پر بتایا کہ میرا سامان نہیں ہے گائوں والوں کا ہے
وڈیرا بااثر ہونے کی وجہ سے کوئی بھی گائوں والا وڈیرہ کے خلاف نہیں بولتا بڑی بات تو یہ کہ گائوں والوں نے بتایا کے خود وڈیرہ کے بچے خود پرائیویٹ اسکولوں میں پڑھتے ہیں
انتظامیہ وڈیرے کے خلاف کارروائی سے گریز محکمہ ایجوکیشن گہری نیند میں ہے
جب میری بات ڈی ای او تعلیم سے ہوئی تو انہوں نے بتایا کہ اگر اس طرح قبضے کی بات ہے تو ہم کارروائی کریں گے ۔ جہاں تک محکمہ تعلیم کی بات کریں تو ان کی کوئی مانیٹرننگ پالیسی نہیں ان کو یہ تک پتہ نہیں کے ڈسٹرکٹ میں کتنے اسکول ہیں اور کتنے اسکول بند ہیں؟ بجٹ کہاں جاتا ہے عجیب صورت حال ہے بس اللہ‎ ہے چلا رہا ہے اس سندھ کو ۔


شیئر کریں: