October 12, 2019 at 9:25 pm

سندھ حکومت کے ترقی کے تمام تر دعوے بس دعوے ہی رہے۔ پیپلز پارٹی کئی بار مرکز اور سندھ میں حکومتیں بنا چکی لیکن صوبہ کو ترقی کی راہ پر گامزن نہ کرسکی۔ پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما اور رکن قومی اسمبلی سید خورشید شاہ کے حلقے میں زندوں کے راستے تو دشوار گزار ہیں ہی لیکن مردوں کو مر کے بھی سکون نہیں۔ میت کو بھی بڑی مشکل سے دشوار گزار راستوں سے ہوئے لکڑی کی پل سے گزارنا پڑتا ہے۔ سکھر کے نواحی علاقے مبارکپور کے قریبی گاوں پیارو مہر میں خاتون کا انتقال ہوا تو لوگوں کو تدفین کے مراحل کی فکر لاحق ہوگئی کہ میت کو کیسے قبرستان تک لے جایا جائے۔
اہل علاقہ کے لیے میت کو قبرستان تک پہنچانا دشوار ہوگیا۔ ورثاء نے میت کو تدفین کے لیے گھر سے قبرستان جانے کے لیے نہر کے اوپر لکڑی کے پل سے بڑی مشکل سے گزار کر قبرستان پہنچایا۔ ایسے مناظر سکھر کی ضلعی انتظامیہ اور منتخب نمائندوں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہیں۔

Facebook Comments