October 12, 2019 at 4:22 pm

ڈینگی مچھر موسمیاتی تبدیلیوں کے باعث عالمی دنیا کے لیے بھی خطرہ بن گیا۔ڈینگی وائرس عالمی ادراہ صحت کی دس بڑی خطرناک بیماریوں میں شامل کی گئی۔عالمی ادراہ صحت کے ایشیا ممالک میں 2019 کے اعداوشمار نے دنیا بھر کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی ۔ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے مطابق2019 میں فلپائن میں 3 لاکھ 22 ہزار سے زائد متاثر جبکہ 1 ہزار 272 موت کا شکار ہوئے۔سری لنکا میں 2 لاکھ 34 ہزار سے زائد متاثرجبکہ سو اموات رپورٹ ہوئیں۔تھائی لینڈ میں 1 لاکھ 46 ہزار ڈینگی کیسز سامنے آئے۔ویتنام میں 1 لاکھ 24 ہزار سے زائد شہری متاثر ہوئے۔ملائشیا میں1 لاکھ سے زائد شہری ڈینگی وائرس کا نشانہ بنے۔بنگلہ دیش میں 1 لاکھ افراد ڈینگی وائرس سے متاثر ہوئے۔سنگآپور ۔بھوٹان ۔نپیال۔مالدیپ میں اس سال ہزاروں ڈینگی وائرس کے کیسز رپورٹ ہوئے ۔پاکستان میں اس سال ڈینگی وائرس کے 27 ہزاز کیسز سامنے آئے۔پاکستان میں بھی آنے والے سالوں میں ڈینگی وائرس سے نمٹنے کی تیاریاں شروع کردی گئیں۔وفاق صوبوں کے ساتھ نیشنل ایکشن پلان کی مربوط حکمت عملی تیار کرئے گا۔پاکستان میں پہلی بار قومی ادراہ صحت میں ڈینگی کے حوالے سے ایمرجنسی آپریشن سنٹرز کو فعال کیا گیا۔پاکستان میں ڈینگی آوٹ بریک دوسرے ایشیا کےمالک سے کم رہا۔

Facebook Comments