October 8, 2019 at 10:20 am

چین کے صوبے سنکینانک میں اویغور مسلمان برادری کے ساتھ مسلسل ناروا سلوک روا رکھنے پر امریکا نے چین کی 28 کمپنیز کو بلیک لسٹ کر دیا ہے۔ امریکا کے محکمہ تجارت کی رپورٹ کے مطابق یہ ادارے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں میں ملوث پائے گئے ہیں۔ ان اداروں کی جانب سے مسلسل اویغور مسلمانوں کا استحصال بھی کیا جارہا ہے۔ امریکا کے اس اقدام سے چین کے ساتھ امریکا کی اقتصادی جنگ مزید شدت اختیار کر جائے گی۔ جن اداروں پر تازہ پابندی لگائی گئی ہے ان میں سرکاری ادارے اور حساس آلات تیار کرنے والی بڑی ٹیکنالوجی کی کمپنیز شامل ہیں ان تمام اداروں سے اب امریکا کی کمپنیز خریداری نہیں کر سکیں گی۔ امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے ٹیلی کام کی بڑی کمپنی ہواوے کو اینٹٹی لسٹ میں شامل کر لیا تھا۔ حقوق انسانی کی تنظیمں کا ماننا ہے کہ مسلمانوں کو حراستی کیمپس اور تربیتی مراکز میں قید رکھا گیا ہے۔ اقلیتی اکثریت اویغورسنکیانگ کی آبادی کا 45 فیصد ہیں ۔

Facebook Comments