September 27, 2019 at 10:18 am

اداکار محسن عباس اور فاطمہ سہیل کا چار برس کا ازدواجی سفر اختتام پذیر ہوگیا، لاہور کی فیملی کورٹ نے فاطمہ سہیل کو خلع کی ڈگری جاری کردی۔لاہور کی فیملی کورٹ کے جج بابرندیم نے فاطمہ سہیل کے دعوے پر خلع کی ڈگری جاری کی۔شوبز سے تعلق رکھنے والے جوڑے محسن عباس اور فاطمہ سہیل کی راہیں بالآخر جدا ہوگئیں ، فیملی کورٹ نے فاطمہ سہیل کے دعوے پر خلع کی ڈگری جاری کر دی ۔ماڈل فاطمہ سہیل اور محسن عباس اپنے وکلاء کے ساتھ عدالت میں پیش ہوئے، فاطمہ سہیل نے بیان دیا کہ شوہر کے ساتھ گزرا ممکن نہیں ہے۔محسن عباس نے کہا کہ وہ بھی فاطمہ سہیل کے ساتھ نہیں رہنا چاہتے ،انکے بچے کو ماں اور باپ دونوں کے پیار کی ضرورت ہے تاہم اس بارے میں قانونی راستہ اختیار کریں گے۔
واضح رہے کہ رواں برس جولائی میں اداکار کی اہلیہ فاطمہ نے سوشل میڈیا پر اپنی پوسٹ میں کہا تھا کہ زبانی اور جسمانی تشدد بہت سہہ لیا، طلاق کی دھمکیاں بھی بہت برداشت کر لیں، سچ بتا دیا، ثبوت پیش کر دیئے، اب محسن عباس سے عدالت میں ملاقات ہوگی۔
اس کے بعد محسن عباس نے پریس کانفرنس میں کہا تھا کہ شادی کے چند روز بعد ہی ان کے جھوٹ سامنے آنے لگے تھے اور ایسے جھوٹ بھی سامنے آئے وہ مجھے کہیں کا بتا کر کہیں اور چلی جاتی تھیں۔

Facebook Comments