September 10, 2019 at 7:24 pm

کربلا میں حرم امام حسین کے باہرتواریج عاشورہ کی رسم ادا کرتے ہوئے بھگدڑ مچ گئی جس میں اب تک 40افراد جاں بحق اور 80زخمی ہوگئے ہیں۔رہے تھے۔ زخمیوں کو حرم امام حسین کے قریب اسپتالوں میں لے جایا گیا ہے۔
ڈاکٹرز کے مطابق زخمیوں کی تعداد بہت زیادہ ہے جس کی وجہ سے اموات میں اضافے کا خدشہ ہے۔زخمیوں کا کہنا ہے کہ جو شہادت پا گئے ہیں وہ خوش نصیب ہیں۔یہاں زائرین اس خواہش کے ساتھ آئے ہیں کہ مولا امام حسینؑ کی زیارت کے بعد انہیں شہادت نصیب ہو۔
حادثہ کے باوجود عاشورہ کی عزاداری جاری رہا۔ حرم امام حسین کے باہر موجود ایک عزادار نے بتایا ہے کہ حادثہ اس وقت پیش آیا جب حرم امام کے باہر تواریج عاشورہ کی رسم ادا کر رہے تھے۔ تواریج عاشورہ میں زائرین دوڑتے ہوئے حاضری دیتے ہیں ۔

Facebook Comments