September 5, 2019 at 7:12 pm

ہوم ورک کیوں نہیں کیا؟ اُستاد کی مار نے15 سالہ حنین بلال کی جان لے لی۔ پولیس نے استاد کو حراست میں لے لیا۔دلخراش واقعہ گلشن راوی کے نجی سکول میں پیش آیا جب سبق یاد نہ ہونے پر ٹیچر کے بچے پر تشدد سے 10 ویں کلاس کا بچہ جان کی بازی ہار گیا۔مار نہیں پیار کا خواب خواب ہی رہ گیا، گلشن راوی میں واقع نجی سکول کے طالبعلم پر ٹیچر نے بدترین تشدد کیا جس کی وجہ سے 10ویں جماعت کے 15 سالہ طالبعلم موت کے منہ میں چلا گیا۔بچے کے ہم جماعت عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ کمپیوٹر کلاس میں بچے نے ہوم ورک مکمل کیا نہ کتاب ساتھ سکول لایا تو استاد نے غصے میں آکر بچے کو سزا دی۔جاں بحق ہونے والے بچے کے چچا اور چچا زاد کا کہنا ہے کہ حنین بلال پر تشدد کرنے والے ٹیچر کو سخت سے سخت سزا دی جائے تاکہ آئندہ کسی کا لخت جگر ناحق موت کے منہ میں نہ جائے۔تشدد کرنے والا ٹیچر گلشن راوی پولیس کی حراست میں ہے جبکہ حنین بلال کی باڈی پوسٹ مارٹم کیلئے مردہ خانے منتقل کر دی گئی ہے۔

Facebook Comments