September 3, 2019 at 1:58 pm

کراچی کے علاقے سولجر بازار میں ہندوؤں کے قدیم شری پنچ مکھی ہنومان مندر میں کھدائی کے دوران نایاب قدیم مورتیاں برآمد ہوئی ہیں برآمد ہونے والی مورتیاں زرد پتھروں سے تراشی گئی ہیں جنھیں ہندومذہبی روایات کے مطابق سندور لگا کر دفن کیا گیا تھا۔مندرکے پنچ مکھی کے مطابق برآمد ہونے والی ہنومان جی، گھنیش مہاراج اور شری مہارویر ہنومان اور نندی مہاویرکی مورتیاں اپنی مخصوص ساخت کی بنا پر 150 سال پرانی لگتی ہیں، سولجر بازار نمبر3 کے گنجان آبادی اور پرپیچ گلیوں میں زرد پتھروں سے تعمیر قدیم شری پنچ مکھی ہنومان مندرکی تزئین وآرائش کے جاری کاموں کے دوران فرش کی کھدائی میں مزدوروں نے 15سے زائد اقسام کی چھوٹی بڑی مورتیاں برآمد کی ہیں جن میں شری مہاویرہنومان،گھنیش مہاراج، وانرسینا، نندی مہاراج اور ہنومان جی کی مورتیاں شامل ہیں۔

شری پنچ مکھی ہنومان مندرکے اندورنی مقام پر نکاسی آب کے نالے سے متصل حصے میں زمانہ قدیم کے ہوون (آگ جلانے والے کنوئیں) ایک گڑھے کے اندر بنی پرانے زمانے کی ایک سرنگ بھی دریافت ہوئی ہے۔
سرنگ میں ماضی میں دنیا کو خیر باد کہنے والے کسی ہندو مذہبی ہستی کی کریا کرم کے بعد کی باقیات سمادی (ہڈیاں) چھوٹی حجم کی مٹکیاں اوران کے زیر استعمال مختلف اقسام کے پتھراور اشیا برآمد ہوئے ہیں۔شری پنچ مکھی ہنومان مندر میں کھدائی کے دوران برآمد ہونے والی مورتیوں کو دیکھنے والے عمررسیدہ ہندو پجاریوں کا قیاس ہے کہ دوران کھدائی برآمد ہونے والی ہنومان اور گھنیش جی کی مورتیاں لگ بھگ 1500 سال پرانی ہوسکتی ہیں تاہم اس پر مزید تحقیق اور اس راز سے پردہ بہتر طورپر ماہر آثارقدیمہ کے اہلکار اٹھاسکتے ہیں۔

Facebook Comments