April 14, 2019 at 1:26 pm

پاکستان میں سائنر کرائم کے بڑھتے ہوئے خطرات کے پیش نظر حکومت نے سائبر کرائم کی روک تھام کے لیے اقدامات کر لیے ہیں۔ دستاویزات کے مطابق حکومت نے سائبر سیکیورٹی اتھارٹی بنانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ تجویز کردہ سائبر سیکیورٹی کے بورڈ میں تمام اسٹیک ہولڈرز شامل کیے جائیں گے۔ ادارے کو سائبر سکیورٹی یقینی بنانے کیلئے تمام جدید سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ سائبر دھمکیوں پر مبنی خطرات کو یہ اتھارٹی موثر انداز میں کاونٹر کرے گی۔ وزیر آئی ٹی کی سربراہی میں کمیٹی سائبر سیکیورٹی فریم ورک پر کام کررہی ہے۔ سائبر حملوں سے بچاو کیلئے اعلی ترین رپورٹنگ طریقہ کار بھی بنایا جائے گا۔ وزارت آئی ٹی کا کہنا ہے سائبر سیکیورٹی اتھارٹی سائبر قوانین پر عملدرآمد کے لئے کام کرے گی۔ سائبر حملوں سے بچنے کیلئے کمپیوٹر ایمرجنسی رسپانس ٹیمیں بھی بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ پاکستان میں انٹرنیٹ صارفین کی تعداد 45 ملین سے تجاوز کر چکی ہے۔ رپورٹ کے مطابق ملک بھر میں 25 فیصد سے زائد انٹرنیٹ صارفین سائبر حملوں کا نشانہ بنتے ہیں۔

Facebook Comments