April 12, 2019 at 4:31 pm

پاکستان کی معیشت کے لیے ایک اور بری خبر آرہی ہے۔ تحریک انصاف کی حکومت کو ایک اور جھٹکے برداشت کرنا پڑے گا۔ پاکستان اسٹاک ایکس چینج کا درجہ دوبارہ منفی کی طرف جاسکتا ہے۔ ۔2017 میں پاکستان اسٹاک کو فرنٹیئر مارکیٹ سے نکال کر ایم ایس سی آئی ایمرجنگ مارکیٹ میں شامل کیا گیا تھا۔ پاکستان اسٹاک ایکسچینج مثبت رجحان کی وجہ سے ایم ایس سی آئی مارکیٹ میں شامل ہوئی تھی ۔2017 کے بعد اسٹاک میں مسلسل منفی رجحان کے باعث اب اسے واپس فرنٹیئر مارکیٹ میں لانے کا امکان ہے۔ جون یا نومبر میں پاکستان اسٹاک کو بیگ گیئر لگانے کا بہت زیادہ امکان ظاہر کیا جارہا ہے۔ فرنٹیئر اسٹیٹس میں واپس جانے سے 500ملین ڈالر کانقصان ہوسکتا ہے۔ اسٹاک ک معیار جانچنے کےلیے پالیسی بورڈ کا ہنگامی اجلاس جمعرات کو ہواتھا۔ پالیسی بورڈ نے معیشت کو سہارا دینے کےلیے سپورٹ فنڈ کی سفارش کی ہے۔

Facebook Comments