April 12, 2019 at 12:54 pm

ابراج گروپ کے بانی اور سابق چیف ایگزیکٹو آفیسر عارف نقوی کو لندن میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔ انہیں ممکنہ طور پر امریکا منتقل کیا جائے گا۔ عارف نقوی پر ہیلتھ فنڈ میں خرد برد اور سرمایہ کاروں کو دھوکہ دہی کے مقدمہ میں گرفتار کیا گیا ہے ۔ فراڈ کیے گئے متاثرین میں بل گیٹس فاؤنڈیشن بھی شامل ہے۔ عارف نقوی کی کمپنی کراچی الیکٹرک کے شیئرز کی مالک بھی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ عارف نقوی پر میاں شہباز شریف کو کراچی الیکٹرک کے لیے دو کروڑ ڈالر کی رشوت دینے سے متعلق خبریں بھی آتی رہی ہیں لیکن ان کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔ عارف نقوی نے کسی بھی غیرقانونی سرگرمیوں میں ملوث ہونے سے انکار کیا ہے۔ اور ہر قسم کے الزمات مسترد کیے ہیں۔ عارف نقوی کے شراکت دار مصطفی عبدالودود کو جمعرات کو نیویارک میں گرفتار کیا گیا تھا۔ ابراج گروپ کی بنیاد 2002 میں رکھی گئی تھی۔ دیکھتے ہی دیکھتے ابراج گروپ مشرق وسطی کا نجی شعبہ میں سب سے بڑا ایکویٹی فنڈ بن گیا اور دنیا بھر کی مارکیٹ میں بھی سرمایہ کاری کے لیے تیزی سے ابھر کر سامنے آیا۔

Facebook Comments