March 14, 2019 at 11:19 am

کرتار پور راہداری پر مذاکرات کے لئے پاکستانی وفد بھارت روانہ ہو گیا،، ترجمان دفتر خارجہ کہتے ہیں امن کا پیغام لے کر جا رہے ہیں،، کشیدگی میں کمی خطے کے لئے ضروری ہے۔قیام امن کے لئے پاکستان کی جانب سے عملی اقدامات کا سلسلہ جاری ہے،، کرتار پور کوریڈور پر پہلے باضابطہ مذاکرات کے لئے اٹھارہ رکنی وفد سرحد پار پہنچ گیا۔واہگہ بارڈر سے روانہ ہوتے ہوئے ترجمان دفتر خارجہ نے کہا پاکستان اقلیتوں کے حقوق کا علمبردار ہے،، کوریڈور سے نہ صرف سکھ برادری کو سہولت ملے گی بلکہ دونوں ممالک کے تعلقات بھی بڑھیں گےڈاکٹر فیصل نے بھارت سے مثبت جواب کی امید ظاہر کی اور پاکستان کی سوچ کو ایک شعر میں بھی بیان کیا۔ڈاکٹر محمد فیصل نے بتایا کہ راہداری منصوبہ رواں سال نومبر میں مکمل ہو جائے گا،، سکھوں کے لیے مقدس مقام گوردوارہ کرتار پور ضلع نارروال میں واقع ہے،، جہاں بابا گرونانک نے زندگی کے آخری ایام گزارے،، کیمرامین منصور چغتائی کے ساتھ عمیر رانا ہم نیوز، لاہور۔۔۔

Facebook Comments